پاکستانی تاریخ کے5بڑے عدالتی فیصلوں میں جمعہ کا دن منتخب کیا گیا

پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان اور سیکرٹری جنرل جہانگیر خان ترین کے خلاف عدالتی فیصلے کے لئے جمعے کے دن کا انتخاب کیا گیا جبکہ سابق وزیر اعظم نواز شریف کو بھی نا اہل جمعے کے روز ہی کیا گیا، پاکستانی تاریخ میں پانچ بڑے فیصلوں کے لئے بھی اسی دن کا انتخاب کیا گیا تھا۔20 جولائی 2007 ء
سپریم کورٹ کے ججز کے13رکنی بنچ نے پرویزمشرف کے ہاتھوں معزول چیف جسٹس افتخارچوہدری کی بحالی کا فیصلہ20 جولائی 2007 بروز جمعہ سنایا۔
31جولائی2007ء
سپریم کورٹ نے سابق صدرپرویزمشرف کی 3 نومبر2007 کی ایمرجنسی اور پی سی اوکوغیرآئینی قرار دینے کا تاریخی فیصلہ 31 جولائی 2009 بروزجمعہ کو ہی سنایا تھا۔
28 جولائی 2017 ء
پانامہ کیس میں سابق وزیر اعظم نواز شریف کو سپریم کورٹ کے ججز کے پانچ رکنی پنچ نے نا اہل قرار دیا تھا اور ان کی نااہلی کا فیصلہ بھی 28 جولائی 2017 بروز جمعہ کوسنایا گیاتھا۔
8دسمبر2017ء
گذشتہ جمعے کو سپریم کورٹ نے اورنج لائن ٹرین کے حوالے سے لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کو کالعدم قرار دیتے ہوئے پنجاب حکومت کو پراجیکٹ جاری رکھنے کا حکم نامہ دیا تھا۔
15 دسمبر2017 ء
آج 15 دسمبر2017 بروز جمعہ کو سپریم کورٹ نے دو اہم کیسز کا فیصلہ سنایا۔
حدیبیہ پیپرملز پرلاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کیخلاف نیب کی اپیل مسترد کردی گئی جبکہ عمران خان اور جہانگیرترین نااہلی کیس میں عمران خان کیخلاف ن لیگ کی درخواست خارج کرتے ہوئے اہل اور جہانگیر ترین خان کو نااہل قرار دے دیا گیا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.