عدالت نے افغان شہری کو ڈکیتی کے مقدمہ سے بری کردیا

سی آئی اے نواں کوٹ کا کارنامہ ،افغان شہری کی غیر موجودگی میں ڈکیتی کا مقدمہ درج کرلیا،عدالت نے جھوٹا مقدمہ ختم کرنے کا حکم دیتے ہوئے افغان شہری اسماعیل کو مقدمہ سے بری کردیاہےدرخواست گزار افغان شہری اسماعیل کی وکیل قرت العین حفیظ نے جوڈیشل مجسٹریٹ ندیم احمد کی عدالت میں موقف اختیار کررکھا تھا کہ سب انسپکٹرسی آئی اے مظہر اقبال نے افغان شہری کو رشوت نہ دینے پر ڈکیتی کے مقدمہ میں ملوث کیا،افغان شہری 17ستمبر 2017ءسے 13دسمبر 2017ءتک افغانستان میں تھا،مذکورہ سب انسپکٹر نے افغان شہری پر یکم دسمبر 2017ءکو جھوٹے مقدمہ میں ملوث کیا ہے،افغان شہری پر جب مقدمہ درج کیا گیا تووہ پاکستان میں موجود نہیں تھا،درخواست گزار کا پاسپورٹ بھی عدالت میں پیش کیا جا چکا ہے ، سب انسپکٹر سی آئی اے مظہر اقبال نے مخالفین کے ساتھ ساز باز کر کے جھوٹے مقدمہ میں ملوث کیا ہے، درخواست گزار کی وکیل نے استدعا کی کہ سب انسپکٹر سی آئی اے مظہر کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے اور افغان شہری اسماعیل کو مقدمہ سے بری کرنے کا حکم دیا جائے جس پر عدالت نے مذکورہ بالا حکم جاری کردیا ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.