پی ڈی ایم کا نشانہ عدلیہ، فوج اور نیب ہے، شیخ رشید

ملتان: وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کا نشانہ عدلیہ، فوج اور نیب ہے۔

شیخ رشید احمد نے ملتان میں میڈیا سے گفتگو کہا کہ اپوزیشن کے جلسے میں لوگ کم ہوں گے، شہبازشریف معاملات کو سلجھانا چاہتے تھے، الجھانا نہیں چاہتے تھے، وہ اس سیاست کا حصہ نہیں بننا چاہتے، 31 دسمبر سے پہلے پہلے جھاڑو پھر جائے گی، 20 فروری تک صورتحال نارمل ہوجائے گی، مارچ میں سینیٹ کے الیکشن ہوں گے جن میں عمران خان کو اکثریت ملے گی۔

شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ عدالتیں جمہوریت کا فیصلہ کرتی ہیں، جلسے جلوسوں سے حکومتیں نہیں گرا کرتیں، میری اس بات پر پی ٹی آئی والے بھی ناراض ہوجاتے ہیں لیکن یہ سچ ہے کہ دنیا کا سب سے بڑا جلسہ 126 دن ہم نے کیا لیکن حکومت نہیں گرا سکے، ہمیں بالآخر عدالتوں میں جانا پڑا، اپوزیشن کا نشانہ عدلیہ، فوج اور نیب ہے، ہم بھی کہہ رہے تھے حکومت آج گئی یا کل گئی، لیکن یہ سارے سیاسی ہتھکنڈے ہوتے ہیں، اپوزیشن میں ہم بھی کہتے تھے اگلے ماہ حکومت نہیں رہے گی لیکن 126 دن کے دھرنے کے باوجود حکومت ٹس سے مس نہ ہوئی۔

وزیر ریلوے نے کہا کہ یہ مفاد پرستوں کا ٹولہ ہے جو ہر فیصلہ اپنے حق میں چاہتا ہے، نوازشریف خود لندن میں بیٹھے ہیں اور لوگوں کو باہر نکلنے کا کہہ رہے ہیں، حکومت نے ان کو جلسے اور جلوسوں کی کھلی اجازت دی ہے چھوٹی موٹی رکاوٹیں ہوتی ہیں، جس کارکن نے پہنچنا ہوتا ہے وہ خود پہنچ جاتاہے، اگر کارکنوں کو گرفتار کیا جارہا ہے تو نہیں کرنا چاہیے، یقین ہے بلاول بھٹو زرداری سمجھ سے کام لے رہا ہے۔

شیخ رشید احمد نے مہنگائی کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان مہنگائی اسی سال ختم کریں گے، نوازشریف کو جو کرنا ہے کرلیں،ان کی سیاست میں کوئی جگہ نہیں، نواز شریف ضیاء الحق کی پیدا وار ہے، انہوں نے جی ایچ کیو کے گیٹ نمبر چار پر آنکھ کھولی۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.