ڈاکٹر عبدالقدیر خان نے بھی وزیر اعظم کی نا اہلی پر انہیں تنقید کا نشانہ بنا ڈالا

لاہور:  پاکستان کے محسن  ڈاکٹر عبدالقدیر خان جو میاں نواز شریف کے بہت قریبی تھے،انہوں نے بھی عدالت کی طرف سے انہیں نااہل قرارد ئیے جانے اور نیب کیسز پر انکے طرز عمل کو تازہ کالم میں شدید تنقید کا نشانہ بنا ڈالا ہے،ڈاکٹر عبدالقدیر خان نے اسلام آباد دھرنے کے اسباب پر بھی تبصرہ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ دھرنے کے اس تمام مسئلے میں سب سے زیادہ نااہلی کا ثبوت وزیر داخلہ اور زاہد حامد نے دیا۔ وزیر داخلہ نے تمام الزام اسلام آباد ہائی کورٹ پر ڈالنے کی کوشش کی۔ اپنی نااہلی دوسروں پر ڈالنا ان کی جماعت کا وطیرہ ہے۔ دونوں نے ضد کی اور معاملے کو حد سے بڑھ جانے دیا۔ جناب راجہ ظفرالحق نے صحیح مشورہ دیا تھا کہ ان کو مستعفی ہوجانا چاہئے تھا۔ میں راجہ صاحب کو چالیس برس سے جانتا ہوں۔ کہوٹہ کے رہائشی ہیں اور ہمارے بہت اچھے تعلقات ہیں، ایماندار ہیں ،راست گو ہیں، نرم مزاج ہیں۔ جھوٹ بولنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، ان ہی کمزوریوں اور خرابیوں کی وجہ سے وزارت نہیں ملی ،صرف نمائشی تحفہ صدارت دیدیا گیا جو برادرم جاوید ہاشمی کو دیدیا گیا تھا، ان کے وہی نقائص ہیں جو راجہ صاحب میں ہیں


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.