عمران اور اس کے اہل خانہ کا کسی بھی بینک میں اکاﺅنٹ نہیں ہے: سٹیٹ بینک

سٹیٹ بینک نے زینب کے قاتل عمران اور اس کے اہل خانہ کے بینک اکاونٹس کی مکمل چھان بین کرکے جے آئی ٹی کو رپورٹ دے دی جس میں ملزم عمران کے کسی بھی کمرشل بینک میں اکاونٹ کی تردید کی گئی ہے، نادرا حکام کے مطابق  ملزم کے دو نہیں بلکہ ایک ہی شناختی کارڈ ہے اور دوسرا نمبر اس کے فارم ”ب“ کا ہے ۔ نادرا نے مجرم کا فارم ”ب“ منسوخ کردیا ہوا ہےگزشتہ روز زینب قتل کیس کے ملزم عمران کے متعدد بینک اکاونٹس کی خبریں سامنے آئی تھیں اور اینکر پرسن شاہد مسعود نے ملزم کے متعدد بینک اکاونٹس کا دعویٰ کیا تھا جس پر وزیراعلیٰ پنجاب نے نوٹس لیتے ہوئے جے آئی ٹی کو اس معاملے کی تحقیقات کا حکم دیا تھا۔ جے آئی ٹی نے زینب قتل کیس کے ملزم عمران کے اکاونٹس کی تحقیقات کیں اور قصور کے تمام بینکوں میں ملزم کے اکاونٹس کی چھان بین مکمل کی جس میں ملزم کا قصور کے 12 بینکوں میں کوئی اکاو نٹ نہیں ملا۔گورنر سٹیٹ بینک کے مطابق ملزم عمران علی کا کوئی بینک اکاﺅنٹ نہیں ہے، ملزم کے دوسرے شناختی کارڈ پر بھی  اکاﺅنٹس چیک کررہے ہیں تاہم ملزم عمران کا ایک موبائل اکاﺅنٹ ہے جس میں 130 روپے ہیں۔سٹیٹ بینک نہ صرف ملزم کا بینک اکاﺅنٹ چیک کیا بلکہ اس کے اہل خانہ کے شناختی کارڈز کی بھی تحقیق کی گئی مگر ان میں بھی کوئی اکاﺅنٹ نہیں ملا۔ دوسری جانب نادرا کا کہنا تھا کہ ملزم کے دو نہیں بلکہ ایک ہی شناختی کارڈ ہے اور دوسرا نمبر اس کے فارم ”ب“ کا ہے ۔ نادرا نے مجرم کا فارم ”ب“ منسوخ کردیا ہوا ہے


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.