لیگی رہنماﺅں کیخلاف توہین عدالت کیس، ہائیکورٹ کا پیمرا کے جواب جمع نہ کرانے پر اظہار برہمی

لاہور ہائیکورٹ نے نوازشریف، مریم نواز اور 16 لیگی رہنماﺅں کیخلاف توہین عدالت کی درخواست کی سماعت کے دوران پیمرا کے جواب جمع نہ کرانے پر اظہار برہمی کیا اور پیمرا کو عدلیہ مخالف بیانات روکنے سے متعلق رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا ۔
تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں سابق وزیراعظم نوازشریف، مریم نواز اور16 لیگی رہنماﺅں کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کی۔
درخواست گزار کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا کہ لیگی رہنما عدلیہ کیخلاف مسلسل نازیبا الفاظ استعمال کر رہے ہیں ،اعلیٰ عدلیہ کیخلاف بیان بازی توہین عدالت کے زمرے میں آتی ہے ،عدالت سے استدعا ہے کہ عدلیہ کیخلاف بیانات کو میڈیا پر نشر کرنے پر پابندی عائد کی جائے ۔
دوران سماعت پیمرا وکیل نے عدالت کو بتایا کہ پیمرا نے تمام چینلز کو اس حوالے سے ہدایات جاری کردی ہیں۔
عدالت نے پیمرا کے جواب جمع نہ کرانے پر اظہار برہمی کیا اور پیمرا کو عدلیہ مخالف بیانات روکنے سے متعلق رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا،عدالت نے نوازشریف کے وکیل کو پیمرا کے جواب کے بعددلائل دینے کی ہدایت کرتے ہوئے لیگی رہنماﺅں کے وکلا کو آج تک جواب جمع کرانے کی مہلت دے دی۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.