ملزم عمران کے مبینہ بینک اکاﺅنٹس کی تفصیلات سے متعلق بینکوں سے تفصیلات فراہم کی گئی

قصور میں ننھی کلیوں کے ساتھ زیادتی کرنے کے بعد انہیں قتل کرنے والا سیریل کلر عمران اس وقت سیکیورٹی فورسز کی گرفت میں آ چکاہے اور عوام کی جانب سے اسے سرعام پھانسی دینے کا مطالبہ کیا جارہاہے تاہم حال ہی میں ملزم کے بینک اکاﺅنٹس میں لاکھوں یوروز کے دعوے نے سوشل میڈیا پر تہلکہ سا برپا کر رکھاہے لیکن وہ فہرستیں جعلی ہیں ۔تفصیلات کے مطابق ملزم عمران علی کے بینک اکاﺅنٹس کی تفصیلات جمع کرنے کیلئے جب مختلف بینکوں کے حکام سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے ان تمام دعووں کو یکسر مسترد کرتے ہوئے سوشل میڈیا پر چلنے والی فہرستوں کو جعلی قرار دیا اور کسی بھی بینک میں ملزم کا اکاﺅنٹ نہ ہونے کی تصدیق کی ۔سوشل میڈیا پر چلنے والی فہرستوں میں کوئی سچائی نہیں ہے وہ دراصل بینکوں کے نادرا کے ساتھ جڑے سسٹم کا لاگ ڈیٹا ہے ،جب ملزم عمران علی کو گرفتار کیا گیا تو اس کا شناختی کارڈ نمبر عام ہو گیا جس کے بعد مختلف بینکوں میں اس کے بینک اکاونٹس کی تفصیلات چیک کرنے کی کوشش کی گئی کہ کہیں اس کا کوئی اکاﺅنٹ تو نہیں تاہم شناختی کارڈ چیک کرنے کے دوران مختلف بینکوں کی برانچوں کا ڈیٹا اکھٹا کر کے اسے سوشل میڈیا پر چلا دیا گیا جس میں کوئی حقیقت نہیں ہے ۔دوسری جانب پولیس ماہرین کا کہناہے کہ یہ کیسا بڑا مافیہ ہے جس نے ملزم کو آسانی کے ساتھ پکڑے جانے دیا اور اسے غائب بھی نہیں کیا ۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.