Daily Taqat

ڈپٹی کمشنر گوجرانوالہ سہیل احمد ٹیپو نےخود کُشی نہیں کی، ان کا قتل کیا گیا، حیران کن انکشاف

آج صبح ڈپٹی کمشنر گوجرانوالہ سہیل احمد ٹیپو کی پھندہ لگی لاش ان کے کمرے سے برآمد ہوئی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق اس کی موت کو پُر اسرار قرار دے کر تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔ پولیس نے بتایا کہ سہیل ٹیپو کی لاش کے ہاتھ بندھے ہوئے تھے ، انہوں نے خود کُشی کی یا ان کا قتل کیا گیا ، دونوں پہلوؤں پر تفتیش کا آغاز کر دیا گیا ہے۔

سکیورٹی گارڈ نے بتایا کی سہیل ٹیپو ساری رات جاگتے رہے اور صبح فجر کی نماز کے بعد اپنے کمرے میں گئے۔ سہیل ٹیپو نے پندرہ دن کی چھُٹی کی درخواست دے رکھی تھی۔ سہیل ٹیپو عارف والا کے رہائشی تھے اور چار ماہ قبل ڈپٹی کمشنر گوجرانوالہ تعینات ہوئے،وہ اپنی والدہ کے ساتھ ڈی سی ہاؤس میں رہائش پذیر تھے، ان کی تین بیٹیاں اور ایک بیٹا لاہور میں مقیم ہے۔ سہیل ٹیپو دو سال ایڈشنل سیکرٹڑی فنانس کے عہدے پر بھی فائز رہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ سہیل ٹیپو کی موت کی تحقیقات کی جا رہی ہیں، جلد ہی ان کی موت کی حتمی وجہ سامنے آ جائے گی۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »