قرض اتارو ملک سنوارو” درخواست کے حقائق پیش نہ کرنے پر مسترد”

کراچی : سندھ ہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم نوازشریف کیخلاف ”قرض اتارو ملک سنوارو“سے متعلق درخواست مسترد کر دی۔تفصیلات کے مطابق سندھ ہائیکورٹ میں دائر درخواست ”قرض اتارو ملک سنوارو“مہم کے حساب کتاب سے متعلق تھی جس میں درخواست گزار نے عدالت کے روبرو موقف اختیار کیاتھا کہ مہم کے22 ہزار800 کھرب کی تفصیلات فراہم کی جائیں، رقم چترال کے تاجرعبداللہ کی نشاندہی پرہیروں کی نیلامی سے حاصل کی گئی اورہیروں کی نیلامی سے حاصل رقم خزانے میں جمع نہیں کرائی گئی،درخواست میں نوازشریف ،سیکرٹری داخلہ ،ڈائریکٹر انٹرپول ،ڈی جی ایف آئی اے اور نیب کو بھی فریق بنایا گیا تھا۔
اس پر عدالت نے استفسار کیا کہ اتنی تفصیل آپ کو کہاں سے پتہ چلی ؟کوئی دستاویزتولگائیں،جسٹس منیب اختر نے درخواست ناقابل سماعت قراردے کر مسترد کر دی،انہوں نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ درخواست گزار نے حقائق پیش نہیں کئے،درخواست غیر ضروری اورعدالتی وقت کا ضیاع ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.