ملزم عمران علی کے سہولت کاروں کوبھی نشانِ عبرت بنایاجائے:محمد امین

قصور میں درندگی کا نشانہ بناکرقتل کی گئی کم سن زینب کے والدین نےمطالبہ کیاہےکہ ملزم عمران علی کے سہولت کاروں کوبھی نشانِ عبرت بنایاجائے،وہ اس گھناؤنے جرم میں اکیلا نہیں،ملزم نے اعترافی بیان میں انکشاف کیاہےکہ اس نے بچی کو گھر میں رکھا۔زینب کے والدین کا کہنا تھا کہ ملزم عمران قتل میں اکیلا ملوث نہیں ،جن لوگوں نے زینب کو گھر میں چھپانے میں مدد کی وہ بھی شریک جرم ہیں،ملزم کے اعترافی بیان کے مطابق بچی اس کے گھر میں رہی،یہ کیسے ممکن ہے کہ اس کے اہل ِخانہ کو اس کاعلم نہ ہو۔زینب کے والدمحمد امین کہتےہیں کہ انہوں نےملزم عمران کومحلے میں کبھی دیکھااور نہ ہی ملاقات ہوئی،ملزم سے کوئی رشتے داری بھی نہیں۔دوسری جانب قصورکی گلیوں میں زینب سمیت دیگر بچیوں سے انسانیت سوزسلوک کےبعد خوف کا ماحول اب بھی طاری ہے،روڈکوٹ محلے میں قائم اسکول معمول کے مطابق کھلارہاتاہم اب والدین زیادہ محتاط نظرآئے اور اپنے بچوں کو خودچھوڑتے اور خودلے جاتے رہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.