زرغون روڈ پر میتھوڈسٹ چرچ پر بم حملہ، ہلاکتوں میں اضافہ

کوئٹہ:  زرغون روڈ پر میتھوڈسٹ چرچ پر بم حملے اور فائرنگ سے خاتون سمیت 5افراد جاں بحق اور 25 زخمی ہوگئے ۔ ابتدائی اطلاعات کے مطابق 2 خودکش حملہ آوروں نے گرجا گھر پر بم حملہ کیا اور اندر داخل ہوکر فائرنگ کی۔زخمیوں میں سے متعدد افراد کی حالت تشویش ناک ہے اور ہلاکتوں میں اضافے کا خطرہ ہے۔ زخمیوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں جنہیں ایدھی ایمبولینسز کے ذریعے سول اسپتال منتقل کیا گیا جبکہ شہر بھر کے اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کرتے ہوئے تمام عملے کو طلب کرلیا گیا ہے۔وزیرداخلہ بلوچستان سرفراز بگٹی نےبتایا کہ دو خودکش حملہ آور تھے۔

گارڈز نے شک ہونے پر ایک حملہ آور کو دروازے پر روکا تو اس نے خود کو دھماکے سے اڑادیا جس کے بعد دوسرا حملہ آور گرجا گھر میں داخل ہونے میں کامیاب ہوگیا اور اس نے اندر گھس کر فائرنگ شروع کردی، سیکیورٹی فورسز سے فائرنگ کے تبادلے میں دوسرا حملہ آور بھی مارا گیا۔اتوار کا دن ہونے کی وجہ سے گرجا گھر میں بڑی تعداد میں خواتین اور بچوں سمیت مسیحی برادری کے افراد عبادت کے لیے جمع تھے اور دعائیہ تقریب ہورہی تھی جبکہ کرسمس کی تیاریاں بھی کی جارہی تھیں۔ سیکیورٹی فورسز کی بھاری نفری نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا ہے اور آپریشن کیا جارہا ہے جب کہ بم ڈسپوزل اسکواڈ کو بھی طلب کرلیا گیا ہے۔ جائے وقوعہ کے قریب کسی جانے کی اجازت نہیں دی جارہی۔ حملے کے بعد سیکیورٹی فورسز کی جانب سے چرچ میں سرچ آپریشن کیا جارہا ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.