سابق صدر پرویز مشرف کو انٹر پول کے ذریعے واطن واپس لایا جائے:خصوصی عدالت

سنگین غداری کیس کی سماعت کرنے والی خصوصی عدالت نے سابق صدر پرویز مشرف کو انٹر پول کے ذریعے واطن واپس لانے کا حکم دے دیا ہے۔سنگین غداری کیس کی سماعت کرنے والی خصوصی عدالت نے پرویزمشرف کے خلاف کیس کا تحریری حکم جاری کردیا۔خصوصی عدالت نے وزارت داخلہ کو حکم دیا کہ سابق فوجی صدر کو وطن واپس لانے کےلیے تحویل ملزمان کے معاہدے کو بروئے کار لایا جائے۔عدالت نے اپنے حکم میں کہا ہے کہ وفاقی حکومت پرویز مشرف کی جائیداد ضبط کرنے کے لیے بھی کارروائی کرے۔سماعت کے دوران پرویز مشرف کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ انہوں نے سابق صدر کی عدالت میں پیشی پر سیکیورٹی کے لیے وزارت داخلہ کو درخواست دے دی ہے۔خصوصی عدالت نے پرویز مشرف کے وکیل کو 7روز میں مشرف کی سیکیورٹی کے لیے درخواست دینے کی ہدایت دی ساتھ ہی حکومت کو بھی ہدایت دی کہ پرویزمشرف کی طرف سے درخواست نہ ملنے پر وفاقی حکومت کارروائی کرے۔خصوصی عدالت نے مزید کہا کہ وزارت داخلہ پرویز مشرف کا شناختی کارڈ پاسپورٹ معطل کرنے کے اقدامات کرے۔سابق صدر کے وکیل نے عدالت کو جواب دیا کہ پرویز مشرف کی سیکیورٹی کے لیے وزارت داخلہ کو درخواست بھجوا دی ہے۔پرویز مشرف کی جانب سے واطن واپسی پر وزارت دفاع کو فول پروف سیکیورٹی کی درخواست دیدی گئی۔وزارت دفاع کو سیکیورٹی کی درخواست میں سابق صدر کے وکیل نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ پرویز مشرف کو سنگین سیکیورٹی خدشات لاحق ہیں۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.