Daily Taqat

اشرف غنی کی پاکستان کے داخلی امور میں کھلی مداخلت، پشتون لانگ مارچ کی حمایت

افغان صدر اشرف غنی نے پاکستان کے داخلی امور میں کھلی مداخلت کرتے ہوئے پشتون لانگ مارچ کی حمایت کرتے ہوئے اسے تاریخی قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ اس کا مقصد خطے سے بنیاد پرستی اور دہشت گردی کے خاتمے کے لئے شہریوں کو حرکت میں لانا ہے۔

یہ امر قابل ذکر ہے کہ ”پشتون لانگ مارچ“ کے نام پر آنے والے افراد اپنے مطالبات کے حق میں اسلام آباد نیشنل پریس کلب کے سامنے دھرنا دیئے بیٹھے ہیں۔ ”ٹوئیٹر“ پر اپنے پیغام میں افغان صدر کا کہنا تھا کہ اس مارچ کی تاریخی اہمیت اسے باچا خان کی عدم تشدد تحریک سے ملاتی ہے جس کے پیچھے ”عدم تشدد کا نظریہ“ اور فلسفہ کارفرما تھا۔

انہوں نے کہا کہ جس طرح سے پاکستان میں وکلا تحریک کامیاب ہوئی تھی مجھے امید ہے کہ ”پشتون لانگ مارچ“ بھی خطے سے دہشت گردی کی جڑیں اکھاڑ پھینکنے میں کامیاب ہو گا۔ کابل کے سانحات کے بعد میں کہہ چکا ہوں کہ افغان اور اس خطے کے عوام دہشت گردی کے خلاف یکسو ہو جائیں۔ میں سمجھتا ہوں کہ ”پشتون لانگ مارچ“ اس کا ردعمل اور بنیاد پرستی کے خلاف بیداری کی آواز ہے۔

پشتون لانگ مارچ انتہا پسندی کے خلاف ایک بڑا مثبت عمل ہے جو ہم سب کو اس کی حمایت پر اخلاقی طور پر پابند کرتا ہے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »