Daily Taqat

شہباز شریف سے مشاورت کے بعد نواز شریف اے پی سی میں شرکت کا فیصلہ کریں گے

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ نواز شریف نے کہا ہے کہ چھوٹے بھائی شہباز شریف سے مشاورت کے بعد اے پی سی میں شرکت کا حتمی فیصلہ کریں گے۔ مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ میاں نواز شریف سے ملاقات میں ملکی سیاسی صورتحال، معاشی حالات اور مہنگائی کے طوفان پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ ہم اصولی طور پر حکومت کو جائز ہی نہیں سمجھتے، ہم ملک اور قوم کو درپیش معاملات کو سامنے لا رہے ہیں۔ مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے کہا کہ شہباز شریف سے مشاورت کے بعد اے پی سی میں شرکت کا فیصلہ کریں گے۔ ان کا کہنا ہے کہ نواز شریف اور حمزہ شہباز کو نیب کے حراست میں موجود شہباز شریف سے ملاقات نہیں کرنے دی گئی۔

انہوں نے کہا کہ سیاسی لوگوں میں معاملات پر اختلافات ہوسکتے ہیں، لیکن سیاسی لوگوں کے درمیان ایسا نہیں ہوتا کہ ملنے سے بھی جائیں جب کہ 70 سال کا تجربہ بتا رہا ہے کہ ہم ترقی کی طرف نہیں بلکہ پیچھے جا رہے ہیں۔

اسرائیلی طیارے سے متعلق سوال پر سربراہ جے یو آئی کا کہنا تھا کہ طیارے کے روٹ کے مطابق وہ پاکستان آیا اور یہاں 10 گھنٹے گزارے، لیکن اس کی تکنیکی طور پر تردید آئی جسے مسترد کرتے ہیں، اسرائیل کا مقصد ہوسکتا ہے کہ پاکستان کو اسلحہ بیچے۔

یاد رہے کہ جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کو آل پارٹیز کانفرنس میں شرکت پر آمادہ کرنے کے لیے ان کی رہائش گاہ جاتی امرا پہنچے، جہاں انہوں نے سابق وزیراعظم سے تقریباً 2 گھنٹے تک ملاقات کی اور انہیں 31 اکتوبر کو ہونے والی کل جماعتی کانفرنس میں شرکت کی دعوت دی۔

ذرائع نے بتایاکہ مولانا فضل الرحمان میاں نواز شریف سے اے پی سی میں شرکت پر اصرار کرتے رہے تا کہ سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا جاسکے۔ تاہم سابق وزیراعظم نے کل جماعتی کانفرنس میں شرکت سے انکار کرتے ہوئے پارٹی وفد بھیجنے کے فیصلے سے مولانا کو آگاہ کیا۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »