اہم خبرِیں
یوم آزادی تقریب،184 شخصیات کیلئے پاکستان سول ایوارڈزکا اعلان حکومت کا اقتصادی راہداری کا دائرہ بڑھانے کا فیصلہ کورونا وائرس، ویکسین کے ابتدائی تجربات کامیاب یوم آزادی کے موقع پرمسلح افواج کے نغمے جاری ساؤتھمپٹن ٹیسٹ، پاکستان نے 8 وکٹ کے نقصان پر 202 رنز بنالیے اسرائیل اوریو اے ای معاہدہ، مسلم ممالک کی کڑی تنقید یوم آزادی مناتے ہوئے کشمیریوں کونہیں بھولنا چاہئے، صدر مملکت وزیر اعظم عمران خان کا یوم آزادی پر قوم کو پیغام سید علی گیلانی کو نشان پاکستان سے نواز دیا گیا بی آر ٹی کے پہلے روز ہی سیکیورٹی اہلکاروں کی پٹائی پاکستان کا 73واں جشن آزادی، ملک بھر میں چودہ اگست کا شاندار ا... بھارت نے امن کوداؤ پرلگادیا، ڈی جی آئی ایس پی کے الیکٹرک خریدار کی جانچ پڑتال کی جائے، چیف جسٹس آج بھارت میں ایک ہندو اسٹیٹ جنم لے رہی ہے، شاہ محمود قریشی ترکی اورفرانس کی افواج آمنے سامنے، فوجی جھڑپ کا خطرہ خیبرپختونخوا اور پنجاب کو بجٹ خسارے کا سامنا یوٹیوب نے ای میل سروس بند کردی ڈاکٹروں کی طرح سوچنے والا "اے آئی سسٹم" تیار نازیہ حسن کو مداحوں سے بچھڑے 20 برس بیت گئے پاکستان انگلینڈ دوسرا ٹیسٹ، آج ساؤتھمپٹن میں شروع ہو گا

دو سال میں عمران خان ملک کا فائدہ نہیں کر سکے :طاہر عزیز خان کی”طاقت” سے خصوصی گفتگو

اسلام آباد:’ ‘ہم عوام پاکستان’ کے چیئر مین طاہر عزیز خان نے کہا ہے کہ پاکستان میں عوامی اور قومی مسائل کا صرف اور صرف واحد حل صدارتی نظام میں ہے کیوں کہ جو اس وقت نظام اس ملک میں چل رہا ہے، وہ صرف ایک خاص طبقے اور چند مراعات یافتہ خاندانوں کے لیے ہے۔

اُنہوں نے کہا اسلامی جمہوریہ پاکستان میں اسلامی صدارتی نظام نافذ کیا جائے جہاں کوئی قادیانی کسی بھی کلیدی عہدے پر فائز نہیں ہونا چاہئے اور اگر کوئی قادیانی کسی اہم ترین سرکاری عہدے پر فائز ہے تو اُسے فی الفور اس عہدے سے ہٹایا جائے۔ روزنامہ ”طاقت ” سے وفاقی دارالحکومت میں خصوصی گفتگو کرتے ہُوئے چیئرمین ”ہم عوام پاکستان” طاہر عزیز خان نے کہا کہ عمران خان نے تبدیلی کا نعرہ لگایا لیکن فائدہ کیا ہوا؟ تبدیلی کے خواہاں پاکستانی عوام کو پچھلے دو سالوں میں کسی تبدیلی کا احساس تک نہیں ہُوا ہے

۔اُنہوں نے کہا کہ اس کی وجہ یہ ہے کہ عمران خان کے ساتھ کام کرنے والی ساری ٹیم وہی نا اہل اور پرانے نظام کی ہے ،اس لیے عمران خان بھی اس نظام میں ناکام ہو گئے ہیں اور ملک کی بہتری لانے میں اور عام لوگوں کے فائدے کے لیے کوئی قدم نہیں اٹھایا جا سکا۔ اُنہوں نے کہا بائیس سال پی ٹی آئی جدوجہد کرتی رہی اقتدار کے لیے لیکن عمران خان لائق اور اہل ٹیم نہیں بنا سکے اور جب وہ اقتدار میں آئے تو پہلے ہی تین ماہ میں اپنا وہ وزیر خزانہ تبدیل کر دیا جس کے بارے میں عمران خان بلند بانگ دعوے کرتے رہے تھے۔ اپنے خصوصی انٹرویو میں ”ہم عوام پاکستان” کے چیئرمین طاہر عزیز خان نے کہا کہ ان حالات میں ہم عوام پاکستان پارٹی ایک ایسی ماہرین کی ٹیم تیار کر رہی ہے جو اپنی فیلڈ کے ماہرافراد پر مشتمل ہے اور ایسے ماہر ٹیکنوکریٹس کی ٹیم کی مدد سے ہی ملک میں بہتری لائی جا سکتی ہے۔ اس کے لیے ملک میں نئے نظام کی ضرورت ہے اور نیا نظام لانے کے لیے ”ہم عوام پاکستان ”ملک میں اسلامی صدارتی نظام لانا چاہتی ہے۔
اُنہوں نے کہا ہم نے الیکشن کمیشن آف پاکستان میں پارٹی کی رجسٹریشن کا عمل شروع کر دیا ہے، جلد ہی ہم اس کو ہر پلیٹ فارم سے لانچ کریں گے۔ چیئرمین ”ہم عوام پارٹی” طاہر عزیز نے کہا کہ 1973 کے آئین کی ایک شق کے مطابق پاکستانی عوام جب چاہے ریفرنڈم کے ذریعے پارلیمانی نظام کی جگہ صدارتی نظام کا نفاذ عمل میں لا سکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج پاکستان کے عوام کو شدید مشکلات کا سامنا ہے، حکومت وقت اپنے منشور کو پورا کرنے میں بالکل ناکام ہو چکی ہے، عوام کو ریلیف دینے کی بجائے ان کے مسائل میں مزید اضافہ کیا جا رہا ہے، ہم عوام پاکستان سیاسی نعروں والی جماعت نہیں ہے۔ ہمیں ملک کی مضبوطی ، فوج کی عظمت اور عوام کی خوشحالی کیلئے جس حد تک بھی جانا پڑا، جائیں گے، ملک کو استحصالی نظام سے نکالنے کیلئے ہم ہر ممکن اقدام کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ 71 برسوں میں پارلیمانی نظام ِ حکومت میں سیاسی جماعتوں نے عوام کے مسائل کے حل کیلئے کوئی اقدام نہیں کیے، ہمیں پاکستان سے محبت اور خدمت کے خیال نے نئی جماعت بنانے پر مجبور کیا۔
انہوں نے کہا20 سال کی محنت سے تحریک انصاف اقتدار میں آئی مگر ان کے پاس کوئی پلان موجود نہیں۔ انہوں نے کہا2 ماہ میں ہم نے پڑھے لکھے نوجوانوں پر مشتمل ٹیم بنائی ہے،ہم نے پارٹی کی 80 فیصد تنظیم سازی کر لی ہے۔ انہوں نے کہا ہم سمجھتے ہیں کہ ملک میں اسلامی صدارتی نظام نافذ کیا جائے جہاں کوئی قادیانی کسی بھی کلیدی عہدے پر فائز نہ رہے ۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.