Daily Taqat

زینب قتل کیس کے بعد اسی نوعیت کے 11 واقعات رونما ہوئے، قومی اسمبلی میں رپورٹ پیش

گزشتہ 5 سالوں میں 5312 خواتین ہوئیں

قومی اسمبلی کے اجلاس میں وزارتِ انسانی حقوق کی جانب سے پیش کی جانے والی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ زینب قتل کیس کے بعد اسی نوعیت کے 11 واقعات رونما ہوئے۔ تفصیلات کے مطابق اسپیکر اسد قیصر کی زیر صدارت قومی اسمبلی کا اجلاس ہوا، جس میں وزارتِ انسانی حقوق کی جانب سے ملک بھر میں خواتین پر تشدد، کاروکاری، قتل اور زیادتی کے واقعات کی تفصیلات ایوان میں پیش کی گئیں۔

رپورٹ کے مطابق گزشتہ 5 سالوں میں 5312 خواتین کوقتل کیا گیا، جن میں سے 1548 کیسز کاروکاری کے ہیں۔ اسی طرح ونی کے 45 واقعات رجسٹرڈ ہوئے، جبکہ 99 خواتین تیزاب گردی کاشکار بھی ہوئیں۔ وزارتِ انسانی حقوق کی جانب سے پیش کی جانے والی رپورٹ کے مطابق ملک بھر میں خواتین سے زیادتی کے 14 ہزار 3 واقعات رپورٹ ہوئے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ زینب قتل کیس کے مجرم عمران کو پھانسی دی جاچکی، جبکہ سانحہ قصور کے بعد اسی نوعیت کے 11 مقدمات درج ہوئے، جن میں سے پنجاب میں 6، خیبرپختونخواہ میں 3 اور بلوچستان سے 2 کیس سامنے آئے۔

رپورٹ کے مطابق پنجاب میں ایک ملزم زیر حراست ہے، جس کے ڈی این اے ٹیسٹ کی رپورٹ کا انتظار ہے۔ جبکہ ایک کیس میں نامزد چار ملزمان کا چالان غلط ثابت ہوا۔ اسی طرح خیبرپختونخواہ اور بلوچستان میں پیش آنے والے واقعات کے ملزمان بھی گرفتار کیے گئے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »