کراچی: رنچھوڑ لائن میں 6 منزلہ عمارت گرگئی

کراچی: رنچھوڑ لائن میں 6 منزلہ عمارت گرگئی

کراچی: شہرقائد کے علاقے رنچھوڑ لائن میں 6 منزلہ مخدوش عمارت زمین بوس ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں رنچھوڑ لائن سومرا گلی میں ایک طرف جھکنے والی عمارت بلآخر منہدم ہوگئی، خوش قسمتی سے مخدوش عمارت سے تمام افراد کو نکال لیا گیا تھا۔

عمارت ایک طرف جھکنے پر تمام مکینوں کو بروقت نکال لیا گیا تھا، گرنے والی عمارت میں موجود 19فلیٹس میں شہری رہائش پذیر تھے، مخدوش عمارت جس جگہ گری اس جگہ پر خالی گودام تھے۔ وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے مخدوش عمارت گرنے کا نوٹس لے لیا۔

Image result for ‫کراچی: رنچھوڑ لائن میں 6 منزلہ عمارت گرگئی‬‎

وزیراعلیٰ سندھ نے  ڈی جی ایس بی سی اے سے رپورٹ طلب کرلی، مراد علی شاہ نے کمشنر کراچی کو معاملے کی تحقیقات  کی ہدایت کردی۔ وزیراعلیٰ کا کہنا ہے کہ ایسی عمارتوں کی تعمیراتوں کا اجازت کون دیتا ہے جوگر جاتی ہیں؟ مراد علی شاہ نے غیرقانوی طور پر عمارتوں کی تعمیر میں ملوث عملے کو سزادینے کا حکم دے دیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ گرنے والی عمارت سابق ڈی جی منظور قادر عرف کاکا کے دور میں قائم کی گئی تھی، اس وقت کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر اور ڈپٹی ڈائریکٹر نے اعتراضات اٹھائے تھے۔ سابق ڈی جی اور ایس بی سی اے افسران کی ملی بھگت سے عمارت کو بنایا گیا تھا، 3سال پہلے بلڈنگ کے نیچے بنے گودام میں آگ لگنے سے عمارت متاثر ہوئی تھی۔

ڈائریکٹر ایس بی سی اے صدر ٹاؤن کا کہنا ہے کہ مخدوش عمارت کو کئی بار خالی کرانے کے احکامات دیئے جاچکے تھے، گودام بنانے کے لیے عمارت کے نیچے پلرز کم دیئے گئے تھے، بلڈنگ  23سال پرانی ہے، تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔

عمارت کے بارے میں متعلقہ حکام کی شدید کوتاہیاں بھی سامنے آگئیں، تین سال پہلے عمارت کی بیسمنٹ میں قائم گودام میں آگ بھی لگی تھی، علاقہ مکینوں کا کہنا ہے کہ اداروں نے عمارت خالی کرانے کا نوٹس بھی دیا بعد ازاں‌ کوئی کارروائی عمل میں‌ نہیں آئی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ رنچھوڑ لائن میں گرنے والی عمارت کے مالک کا نام سلیمان سومرو ہے، سلیمان سومرو ٹمبر مارکیٹ کے چیئرمین بھی ہیں، جبکہ ان کا بیٹا یوسی چئیرمین ہے۔

دوسری جانب تحریک انصاف کے ایم پی اے خرم شیرزمان کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی رہنما رمضان گھانچی صبح سے جائے وقوعہ پر موجود ہیں، شکر ہے کہ عمارت سے بروقت لوگوں کو نکال لیا گیا، مخدوش عمارت کے معاملے کی مکمل تحقیقات ہونی چاہیے، کرپشن کے خاتمے، ایکشن اور سزا نہیں ہوگی مسائل حل نہیں ہوں گے، غیرقانونی طور پر عمارتیں بنائی جارہی ہیں، ہر فلور کی مد میں کروڑوں روپے رشوت لی جاتی ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.