اہم خبرِیں
نوجوانوں کے لیے انٹرن شپ پروگرام کا اعلان آصف علی زرداری کےخلاف چارج شیٹ جاری سینیٹ کمیٹی نے جسٹس رٹائرڈ جاوید اقبال کو طلب کرلیا نواز شریف نے احتساب عدالت کی کارروائی چیلنج کردی نواز شریف کواس حال میں پہنچانے والی مریم نواز ہے، شیخ رشید پاکستان کو کبھی تنہا نہیں چھوڑا، سعودی عرب حکومت کا پاکستانی واٹس ایپ بنانے کا منصوبہ اسٹاک ایکسچینج منفی ومثبت خبروں کی لپیٹ میں سائنسدانوں نے ’’سپر مِنی‘‘ پاور بینک تیار کرلیا بیکٹیریا کے نمونے لینے والابرقی کییپسول تیار صبا قمراوربلال سعید کی عبوری ضمانت منظور قومی ٹیم جارحانہ کرکٹ کھیلیں، انضمام الحق پاکستان کرکٹ ٹیم نے تمام ٹیموں کو پیچھے چھوڑ دیا بھارت کے یوم آزادی پر دنیا بھر میں یوم سیاہ منایا جا رہا ہے پاکستان قوم کوسلام محبت پیش کرتا ہوں، طیب اردگان آرمی چیف اور بل گیٹس میں ٹیلی فونک رابطہ پاکستان میں اقلیتوں کو عزت اوروقار دیا گیا ہے، فیاض الحسن چوہا... جوائنٹ ایکشن کمیٹی اسکول کھلوانے میں ناکام پروفیسر خالد مسعود گوندل کیلئے حکومت کا تمغہ حسن کارکردگی کا ا... یوم آزادی تقریب،184 شخصیات کیلئے پاکستان سول ایوارڈزکا اعلان

ڈومیسٹک فلائٹس پر پی آئی اے کی مسافروں کے لیے ‘دھماکہ خیز آفر’

پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائن (پی آئی اے) نے یورپی ممالک کے لیے فلائٹ آپریشن معطل ہونے کے بعد تمام تر توجہ ڈومیسٹک پروازوں پر مرکوز کرلی ہے، جس کے بعد مسافروں کو اپنی طرف راغب کرنے کے لیے کرایوں میں خاطر خواہ کمی کر دی گئی ہے۔
پی آئی اے کے ترجمان عبداللہ حفیظ نے بتایا ہے کہ ایئرلائن کی زیادہ توجہ اس وقت ڈومیسٹک پروازوں پر ہے، یہی وجہ ہے کہ جولائی کے مہینے سے ڈومیسٹک پروازوں کے کرایوں میں کمی کرتے ہوئے ملک کے مختلف شہروں کے درمیان ٹکٹ کی قیمت 11 ہزار پانچ سو روپے تک کر دی ہے۔
ان کے مطابق اضافی سامان کے بغیر سفر کرنے کا آپشن بھی متعارف کروایا گیا ہے، جس میں ٹکٹ کی قیمت مزید کم ہو کر نو ہزار پانچ سو روپے رہ جاتی ہے، جس میں صرف دستی سامان یا سات کلو وزن کا چھوٹا بیگ لے جانے کی اجازت ہوگی۔
عبداللہ حفیظ کا کہنا ہے کہ کرایوں میں کمی کا مقصد مسافروں کو سستے سفر کی سہولت فراہم کرنا ہے۔ ‘یہ ایک طرح کی ڈسکاؤنٹ آفر ہے جو ہم اپنے کسٹمرز کو دے رہے ہیں، اس کی کوئی میعاد متعین نہیں، یہ یونہی چلتی رہے گی۔’
ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ کرائے کم کرنے کے لیے حکومت کسی قسم کی کوئی سبسڈی نہیں دے رہی نہ ہی نقصان میں رہتے ہوئے پروازیں چلا رہی ہے۔
واضح رہے کہ جب کورونا پیش نظر کیے جانے والے لاک ڈاؤن کے بعد رمضان میں ڈومیسٹک فلائٹ آپریشن بحال ہوا تھا تو اس وقت کرائے موجودہ کرائیوں سے دو گنا تھے اور کراچی سے لاہور یا اسلام آباد کا یک طرفہ ٹکٹ 25 ہزار سے زائد قیمت میں دستیاب تھا۔
22 مئی کو پی کے 8303 کو پیش آئے حادثے کی رپورٹ منظر عام پر آنے کے بعد ‘جعلی لائسنس ہولڈر پائلٹس’ کا معاملہ سامنے آیا ہے جس کے بعد سے قومی ایئرلائن کی جانب سے محفوظ سفر کو یقینی بنانے کے اقدامات پر سوال اٹھ رہے ہیں۔
یہی وجہ ہے کہ یورپی ممالک نے پی آئی اے کے آپریشن پر چھ ماہ کی پابندی لگا دی ہے جبکہ دیگر ممالک کی جانب سے بھی اس حوالے سے وضاحت طلب کی گئی ہے۔
پی آئی اے کے ترجمان کے مطابق یورپ کے لیے اگرچہ فضائی آپریشن معطل ہے مگر مشرق وسطیٰ کے لیے پروازیں جاری ہیں۔
پی آئی اے طیارہ حادثہ اور پھر پائلٹس کے لائسنس متنازعے ہونے کی خبروں کے بعد سے لوگ پی آئی اے میں سفر کرنے کے حوالے سے تذبذب کا شکار ہیں۔
لاہور کی رہائشی فائزہ اسلم نے بتایا کہ انہیں جولائی کے وسط میں کراچی جانا ہے تاہم پی آئی اے کے حوالے سے اتنی منفی خبریں سن کر ان کے دل میں ڈر بیٹھ گیا ہے، لہٰذا وہ کسی دوسری ایئرلائن سے بکنگ کروائیں گی۔
دوسری جانب کراچی میں ٹریول ایجنٹ منعاقب ارتقاء نے بتایا کہ پی آئی اے طیارہ حادثے کے ایک ہفتے بعد تک مسافر پی آئی اے کا ٹکٹ نہیں خرید رہے تھے بلکہ نجی ایئرلائنز پر سفر کو ترجیح دے رہے تھے۔
البتہ منعاقب کا کہنا تھا کہ آج کل مسافروں کی تعداد بہت کم ہے، شاید یہی وجہ ہے کہ ایئرلائنز اپنے کرایوں میں کمی کر رہی ہیں۔
اس معاملے پر نجی ایئرلائن سیرین کے عہدیدار عابد زیدی نے بتایا کہ مسافروں کی تعداد معمول سے کم ہے۔
واضح رہے کے پی آئی اے کی جانب سے کرایوں میں کمی کے بعد نجی ایئرلائنز سیرین اور ایئر بلیو نے بھی اپنے کرایوں میں کمی کی ہے تا کہ مقابلے کی فضا قائم رہے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.