پنجاب میں اسمارٹ لاک ڈاؤن ختم

لاہور:پنجاب کی حکومت نے صوبہ بھر میں فوری طور پر اسمارٹ لاک ڈاؤن ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ پنجاب حکومت نے لاک ڈاؤن 5 اگست کے بجائے اتوار اور پیر کی درمیانی شب ختم کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔

سیکریٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر کیپٹن ریٹائرڈ محمد عثمان کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق مویشی منڈیوں سے لیے گئے اسمارٹ سیمپلز کے نتائج حوصلہ افزا آنے پر اسمارٹ لاک ڈاؤن ختم کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ سیکرٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کئیر کے مطابق عیدالاضحٰی پر بازاروں اور تجارتی مراکز کی بندش سے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے امکانات کم ہونے پر فیصلہ کیا گیا۔

نوٹیفکیشن میں 5 اگست کو کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے اجتماع کی اجازت ہو گی۔ تمام متعلقہ ادارے کشمیر ریلی کے دوران سماجی فاصلہ اور دیگر تمام ایس او پیز پر عمل درآمد یقینی بنائیں گے۔ محکمہ صحت کی جانب سے جاری کردہ مراسلے کے مطابق تعلیمی ادارے، شادی ہال، ریسٹورنٹ، پارک اور سینما ہال بدستور بند رہیں گے۔ سماجی اور مذہبی اجتماعات، کھیل کی سرگرمیوں کے لیے اجتماع کی اجازت نہیں ہو گی۔

نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ تمام کاروباری مقامات صبح 9 سے شام 7 بجے تک، سوموار تا جمعہ کھلے رہیں گے۔ میڈیکل اسٹورز، پنکچر شاپ، آٹا چکی تندور، زرعی ورک شاپس 24 گھنٹے کھلی رکھنے کی اجازت ہو گی جب کہ کال سنٹرز کو 50 فی صد اسٹاف کے ساتھ کھلا رکھنے کی اجازت ہو گی۔ بین الاضلاع ٹرانسپورٹ 24 گھنٹے چلنے کی اجازت ہو گی۔ گروسری اور کریانہ سٹور صبح 9 سے شام 7 تک، ہفتہ بھر کھلے رہیں گے۔

سیکرٹری پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ کئیر کے نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ چرچ صرف اتوار کو صبح 7 سے شام 5 بجے تک عبادت کے لیے کھلے رہیں گے۔ نوٹیفکیشن کا اطلاق فی الفور ہو گا جو کہ 17 اگست تک نافذ العمل رہے گا۔ یاد رہے حکومتِ پنجاب نے عیدالاضحٰی پر کرونا وائرس کے اثرات کو کم سے کم کرنے کے لیے گزشتہ ماہ 28 جولائی کو صوبہ بھر میں اسمارٹ لاک ڈاؤن نافذ کیا تھا۔ جسے پانچ اگست تک نافذالعمل رہنا تھا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.