Daily Taqat

سنیئر صحافی مطیع اللہ جان اسلام آباد سے اغوا

اسلام آباد: سینئر صحافی مطیع اللہ جان کو نامعلوم افراد نے اغوا کر لیا ہے۔ سوشل میڈیا پر مطیع اللہ جان کو زبردستی ایک گاڑی میں بٹھا کر لے جانے کی ویڈیوز بھی گردش کر رہی ہیں۔

مطیع اللہ جان کے اہلِ خانہ اور وفاقی وزیرِ اطلاعات سینیٹر شبلی فراز نے مطیع اللہ جان کے اغوا کی تصدیق کی ہے۔ سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ انہوں نے اس معاملے پر وزیرِ داخلہ اعجاز شاہ سے بھی رابطہ کیا ہے۔ حکومت مطیع اللہ جان کا سراغ لگانے کی پوری کوشش کرے گی۔ چند روز قبل ججز سے متعلق ایک ٹوئٹ پر مطیع اللہ جان کو سپریم کورٹ نے توہینِ عدالت کا نوٹس بھی جاری کیا تھا اور اس نوٹس کی سماعت کے سلسلے میں انہیں بدھ کو عدالت میں پیش ہونا تھا۔

    اسلام آباد ہائی کورٹ نے مطیع اللہ جان کے اغوا پر سیکریٹری داخلہ اور اسلام آباد کے چیف کمشنر اور آئی جی پولیس کو نوٹس جاری کر دیے ہیں۔ عدالت نے حکم دیا ہے کہ مطیع اللہ جان کا سراغ نہ ملنے کی صورت میں تینوں حکام بدھ کو عدالت میں ہوں۔ مطیع اللہ جان کی بازیابی کے لیے ان کے بھائی شاہد اکبر عباسی نے اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی تھی جس میں انہوں نے وزارتِ داخلہ، دفاع اور پولیس کو فریق بنایا ہے۔ درخواست میں آئی ایس آئی کے ڈائریکٹر جنرل کو بھی فریق بنایا گیا ہے۔

    مطیع اللہ جان کی اہلیہ کنیز صغریٰ نے امریکی چینل کو بتایا ہے کہ ان کے شوہر دن 11 بجے کے قریب اُنہیں لینے اسکول آئے تھے۔ وہ اُنہیں کال کرتی رہیں لیکن اُن سے رابطہ نہیں ہو رہا تھا جس کے بعد اسکول کے گارڈ نے بتایا کہ اُن کی گاڑی تو ڈیڑھ دو گھنٹے سے باہر کھڑی ہے۔ جب وہ اسکول سے باہر آئیں تو گاڑی کھلی ہوئی تھی جس میں ان کا ایک موبائل فون بھی موجود تھا۔ اس پر اُنہوں نے اپنے دیور سے رابطہ کیا جنہوں نے اُنہیں پولیس کو کال کرنے کا کہا۔

    مطیع اللہ جان کی اہلیہ کا مزید کہنا تھا کہ اُن کے شوہر پر اس سے قبل بھی دو مرتبہ حملے ہو چکے ہیں۔ چند روز قبل جسٹس قاضی فائز عیسیٰ سے متعلق کیس کے فیصلے پر اُنہوں نے ایک ٹوئٹ کی تھی جسے اسلام آباد ہائی کورٹ نے نظر انداز کر دیا تھا لیکن سپریم کورٹ نے اُنہیں توہینِ عدالت کا نوٹس جاری کیا تھا۔ مطیع اللہ جان کے بھائی ایڈوکیٹ شاہد اکبر عباسی نے امریکی چینل کو بتایا کہ دو گاڑیوں میں سادہ کپڑوں میں ملبوس اور کالی وردیوں میں جدید اسلحے سے لیس افراد نے مطیع اللہ جان کو اغوا کیا۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »