اہم خبرِیں
امریکی شہر کیلی فورنیا میں کورونا نے تباہی مچا دی پاکستان نیوی کے بحری بیڑے میں نئے اور جدید بحری جنگی جہازپی ای... معاشرے میں بگاڑ کے اسباب ”کشمیریوں کی زندگی کی بھی اہمیت ہے“ مجھے دشمن کے بچوں کو پڑھانا ہے پاکستان ترقی کا ہدف حاصل کرنے میں کامیاب، اقوام متحدہ کی رپورٹ... امریکی بحری جنگی جہاز میں دھماکا، 21 افراد زخمی سعودی عرب میں تیل کی تنصیبات پرمیزائلوں سے حملہ دنیا بھر میں آج یومِ شہدائے کشمیر منایا جائے گا پاکستان فرانسیسی شعبہ زراعت اور شعبہ حیوانات کی مہارت سے استفا... میر شکیل الرحمان کی ہمشیرہ کے انتقال پر سی پی این ای کا تعزیت ... شمالی وزیرستان، پاک فوج کا آپریشن، چاردہشت گرد جہنم وصل گھوٹکی ٹرین حادثے کو پندرہ سال بیت گئے پاکستان میں کورونا کے 2 ہزار 521 نئے کیسز،74 اموات انگلستان کی پاکستان میں ڈھائی لاکھ ڈالر کی سرمایہ کاری آیاصوفیہ مسجد کی کہانی ” آپ ایسا کریں کہ آپ کل آ جائیں“ اسٹیٹ بینک کےقوانین کی خلاف ورزی پر 15 کمرشل بینکوں کو بھاری ... ایرانی سیبوں کی درآمد، قومی خزانے کو نقصان پہنچانے پر 22 درا... شاہد آفریدی کا کورونا میں مبتلا بچن خاندان کے لیے نیک خواہشات ...

دنیا اس حقیقت سے واقف ہے، وقت آگیا ہے کہ اسرائیل کو تسلیم کرلیا جائے

وزیراعظم نیتن یاہو کے خفیہ دورے کے بعد عمان نے اسرائیل کو تسلیم کرنے کا عندیہ دیا ہے۔ غیر ملکی ذرائع کے مطابق اسرائیل کے وزیراعظم نیتن یاہو خفیہ دورے پر عمان پہنچے تھے، جہاں ان کا پُرتپاک استقبال کیا گیا۔ وزیراعظم نیتن یاہو نے سلطنت عمان کے سلطان قابوس بن سعید سے ملاقات کی۔ ملاقات کو نیتن یاہو کی اسرائیل واپسی تک خفیہ رکھا گیا۔

دونوں رہنماؤں کی ملاقات کے بعد بحرین میں سیکیورٹی سمٹ میں شریک عمان کے وزیر خارجہ یوسف بن علوی بن عبداللہ نے اپنے خطاب میں اسرائیل کو آزاد و خود مختار ریاست تسلیم کرنے کا عندیہ دیتے ہوئے کہا کہ اسرائیل مشرق وسطیٰ میں موجود ایک ملک ہے، اور ہم سب اس سے آگاہ ہیں اور دنیا بھی اس حقیقت سے واقف ہیں۔ اس لیے اب وقت آگیا ہے کہ اسرائیل کو تسلیم کرلیا جائے۔

قبل ازیں اسرائیلی وزیراعظم اور عمان کے سلطان کے درمیان ہونے والی ملاقات کے دوران مشرق وسطیٰ میں قیام امن اور استحکام کے لیے مختلف تجاویز پر تبادلہ خیال کیا گیا اور دو طرفہ باہمی دلچسپی کے امور اور فلسطین و اسرائیل تنازعے کا حل بھی زیر بحث آیا۔

اسرائیلی وزیراعطم نیتن یاہو کا کہنا تھا کہ ایران سے درپیش خطرات نے مشرق وسطیٰ کے دیگر ممالک کو ایک دوسرے کے قریب کر دیا ہے، جو خطے میں امن اور طاقت کے توازن کو برقرار رکھنے کے لیے خوش آئند ہے۔ عمان کے سلطان قابوس بن سعید نے کہا کہ فلسطین اور اسرائیل کے درمیان پر امن تصفیے کے خواہاں ہیں اور اس حوالے سے چند تجاویز بھی دی ہیں تاہم عمان ثالثی کا کردار ادا نہیں کرے گا۔

واضح رہے کہ اسرائیل کے وزیراعظم نیتن یاہو کے گزشتہ روز عمان کا دورہ فلسطین کے صدر محمود عباس کے دورے کے محض دو دن بعد کیا گیا۔ اسرائیلی وزیراعظم کے دورے کے بعد عمان اسرائیل کو تسلیم کرنے کے حوالے سے پالیسی میں لچک دیکھی گئی ہے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.