Latest news

امریکی سفارتخانہ 2019 میں یروشلم منتقل کردیا جائے گا

تل ابیب:امریکہ کے نائب صدر مائیک پینس کا کہنا ہے کہ سال 2019 کے اختتام تک امریکی سفارتخانہ تل ابیب سے یروشلم منتقل کردیا جائے گا۔

دورہ اسرائیل کے دوران اسرائیلی پارلیمان سے خطاب کے دوران امریکی نائب صدر کا کہنا تھا کہ فلسطینی قیادت سے استدعا ہے کہ دوبارہ مذاکرات کی میز پرآئیں کیونکہ امن صرف مذاکرات کے ذریعے حاصل کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سال 2019 سال کے اختتام تک امریکی سفارتخانہ تل ابیب سے یروشلم منتقل کردیا جائے گا۔

مائیک پینس کی تقریرکے دوران اسرائیلی پارلیمان کے عرب ممبران نے بینرز اٹھا کر احتجاج کیا جن پر’’یروشلم فلسطین کا دارالحکومت‘‘ درج تھا۔ احتجاج کے باعث امریکی نائب صدرکو تقریر بھی روکنی پڑی۔

مائیک پینس نے دوران احتجاج مسکراتے ہوئے کہا کہ اچھی بات ہے کہ میں جمہوری نظام سے خطاب کررہا ہوں۔

واضح رہے کہ امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ نے دسمبر 2017 میں یروشلم کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرتے ہوئے امریکی سفارتخانہ تل ابیب سے یروشلم منتقل کرنے کا اعلان کیا تھا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.