تاجر برادری کا 15 فروری کے بعد غیر معینہ مدت کے لئے میر پور میں ہڑتال کا اعلان

چیف آرگنائزر آل آزاد کشمیر انجمن تاجران وصدر مرکزی انجمن تاجران میرپور چوہدری محمد نعیم نے کہا ہے کہ پراپرٹی ٹیکس کو کسی صورت قبول نہیں کریں گے ۔حکومت پراپرٹی ٹیکس کو ختم کرے ۔اگر حکومت نے اپنی روش نہ بدلی تو 15فروری کے بعد پورے آزاد کشمیر میں غیر معنیہ مدت کے لیے احتجاج ہو گا ۔آزاد کشمیر کی تاجر برادری پہلے ہی بھاری ٹیکس ادا کر رہی ہے ۔پراپرٹی ٹیکس ،بلدیاتی ٹیکس اور ضلع کونسل ٹیکس کو نہیں مانتے ۔تاجروں کا مذید امتحان نہ لیا جائے ۔تاجر برادری شٹر ڈئوان کر کے سخت احتجاج کرئے گی ۔میرپور ،بھمبر ،کوٹلی اور میرپور ڈویزن کے تاجر پراپرٹی ٹیکس کو پہلے ہی مسترد کر چکے ہیں ۔میرپور میں پراپرٹی ٹیکس کے خلاف کئی گزشتہ دنوں سے احتجاج جاری ہے ۔سابق حکومت نے اگر ٹیکس لگایا ہے تو موجودہ حکومت اسے ختم کرے ۔

گلگت میں تاجروں نے متحد ہو کر ٹیکس کو ختم کرنے کے خلاف جو احتجاج کیا اور ٹیکس ختم کرنے میں کامیابی حاصل کی ۔جنرل حیات خان کے دور میں لگایا گیا ٹیکس مسلم کانفرنس کے دور حکومت میں ختم ہوا ۔حکومت ٹیکس کے خاتمے کے لیے فوری اقدامات اٹھائے ۔بصورت دیگر 15فروری کو سخت احتجاج پورے آزاد کشمیر میں پھیل جائے گا ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے مظفر آباد میں آل آزاد کشمیر انجمن تاجران کے عہدیدان اور آزاد کشمیر کے تمام اضلاع سے آئے ہوئے انجمن تاجران کے صدرو اور دیگر عہدیدارن کے اجلاس میں پراپرٹی ٹیکس اور دیگرٹیکسوں کے خلاف تاجروں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.