نوجوان نے ایک ہی خاندان کے چار افراد کو ذبح کر دیا

افریقی عرب ملک مراکش میں جمعرات کے روز ایک سنگ دل شخص نے اپنی ماں سمیت خاندان کے چار افراد کے گلے کاٹ کرانہیں موت کے گھاٹ اتار دیا۔

ذرائع کے مطابق یہ لرزہ خیز واقعہ جمعرات کو شمالی مراکش کے تطوان شہر میں پیش آیا۔ مقامی میڈیا اور پولیس کے مطابق ایک نوجوان نے اپنی ماں، چھوٹے بھائی اور تین اور پانچ سال کی عمر کےدو بھانچوں کو تیز دھار آلے سے ذبح کرکے موت کے گھاٹ اتار دیا

۔ملزم کی شناخت ایوب کے نام سے کی گئی ہے جس کی عمر 27 سال بیان کی جاتی ہے۔ ملزم نشے کا عادی بتایا جاتا ہے جو تن تنہا ایک گھر میں رہتا اور بہت کم کسی سے بات چیت کرتا ہے۔ تاہم اس کے اہل خانہ بوسافو کالونی میں رہائش پذیر ہیں۔مجرم کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔ تفتیش کاروں کا کہنا ہے کہ اپنے خاندان کو قتل کرنے والا شخص نفسیاتی عوارض کا شکار ہے۔ اس کے خلاف قانونی کارراوئی شروع کردی تھی ہے۔ خاندان کے بہیمانہ قتل کے اس مجرمانہ واقعے نے پورے مراکش کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.