پاکستان کیخلاف بیان ، امریکی صدر کے مشیرساجد تارڑ بھی میدان میں آگئے، ٹرمپ کو زوردار جھٹکا، بھارت کی امیدوں پر پانی پھیردیا

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مشیر ساجد تارڑ کا کہنا ہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا بیان حرف آخر نہیں اور اب بھی معاملات بہتر کیے جاسکتے ہیں، ٹرمپ کی ٹوئٹ پاکستان پر مایوسی کا اظہار ہے جس نے پوری دنیا میں ہلچل پیدا کردی ہے تاہم ڈونلڈ ٹرمپ کا بیان حرف آخر نہیں ہے۔ساجد تارڑ نے کہا کہ پاکستان کا موازنہ بھارت کے بجائے بنگلا دیش اور سری لنکا سے کیا جانا لمحہ فکریہ ہے اور پاکستان کے دہرے معیار کی وجہ سے امریکا کا بھارت کی طرف جھکاو¿ ہے جب کہ امریکا سمجھتا ہے پاکستان یا بھارت کی مدد کے بغیر افغانستان میں امن ممکن نہیں ہے۔ساجدڈونلڈ ٹرمپ کے مشیر ساجد تارڑنے کہا کہ پاکستان کی جغرافیائی اہمیت کو کوئی نظرانداز نہیں کرسکتا تاہم پاکستان کی خارجہ پالیسی کا فقدان آج ملک کو اس نہج پر لے آیا ہے اور وہ خطے میں ترقی کی دوڑ میں پیچھے رہ چکا ہے۔ساجد تارڑ کا کہنا تھا کہ اسامہ بن لادن اور حقانی نیٹ ورک کی سپورٹ پر پاکستان دنیا کو مطمئن نہیں کر سکا، امریکا سمجھتا ہےاس کی امداد صحیح جگہ نہیں پہنچتی اور 33 ارب ڈالر کرپشن کی نذر ہوئے جب کہ امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن نے بھی پاکستان سے واپسی پر اسی مایوسی کا اظہار کیا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.