امریکہ کے غلط فیصلوں کے خلاف وزیرخارجہ خواجہ آصف کی تنقید

وزیرخارجہ خواجہ آصف نے پراپنے ٹوئٹ میں نام لیے بغیر امریکا کو جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ پوچھتے ہو کیا کیا؟ ایک آمر نے فون کال پر سرنڈر کیا، وطن کو بارود اور خون سے نہلایا۔

خواجہ آصف نے کہا کہ افغانستان پر اپنے اڈوں سے تمہارے 57800 حملے، ہماری گزر گاہوں سے تمہارا اسلحہ اور بارود گیا۔ پاکستان کے ہزاروں شہری، فوجی، جرنیل، بریگیڈیئر اور لیفٹیننٹ امریکا کی چھیڑی ہوئی جنگ کی بھینٹ چڑھے۔

وزیرخارجہ نے کہا کہ ہم نے گوانتانامو بے کو بھر دیا، ہم آپ کی خدمت میں اتنے مگن ہوئے کہ پورے ملک کو 10سال تک لوڈشیڈنگ اور گیس شارٹیج کے حوالے کیا، معیشت برباد ہو گئی لیکن خواہش تھی آپ راضی رہیں، ہم نے لاکھوں ویزے پیش کئے،بلیک واٹر،ریمنڈ ڈیوس نیٹ ورک جگہ جگہ پھیل گئے۔

انہوں نے کہا کہ چار سال سےدھائیوں کا ملبہ صاف کر رہے ہیں۔ہما ری افواج بے مثال جنگ لڑ رہی ہے،قربانیوں کی لامتناہی داستان ہے۔خواجہ آصف نے مزید کہا کہ ماضی امریکا پر اعتماد میں احتیاط سکھاتا ہے۔ ہما ری دہلیز پر اپنی ناکامی کا ملبہ نہ رکھو۔آپ خوش نہیں افسوس ہے،ہمارے وقار پر اب سمجھوتا نہیں ہوگا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.