کشمیر میں تعلیمی پیکج کو ن لیگ کی حکومت نے ختم کرنے کی کوشش کی

سابق سپیکر اسمبلی آزاد کشمیر سردار غلام صادق خان نے کہاکہ پیپلز پارٹی کے دور میں تعلیمی پیکچ منظور ہوا جس کومسلم لیگ ن کی حکومت نے ختم کرنے کی کوشش کی لیکن وہ اپنے مقاصد میں کامیاب نہیں ہوئی ہماری حکومت نے آزاد کشمیرکو ایجوکیشن سٹی بنایا جس کا کریڈٹ پیپلز پارٹی کو جاتا ہے آزاد کشمیر میں پانچ یونیو رسٹیاں اور تین میڈیکل کالجز کا تحفہ عوام کو دیا جس سے خطہ کی عوام مستفید ہورہے ہیں پیپلز پارٹی کے دور کو عوام آج بھی سنہری الفاظ میں یاد کرتی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز ہجیرہ گیلانی پلازہ میں سٹارز اکیڈمی ہجیرہ کے نئے کیمپس کی افتتاحی تقریب سے بحثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر انکے ہمراہ سید تنویر گیلانی،جاوید چوہدری ایڈوکیٹ

،سردار نقی خان، سردار سرفراز خان بھی موجود تھے انہوں نے پرنسپل سٹارز اکیڈمی ہجیرہ اشفاق ملک کو مبارکباد دیتے ہوئے کہاکہ آزاد کشمیر میں ہجیرہ وہ واحد شہر ہے جو تعلیمی میدان میں سب سے سبقت لے گیا ہے پورے آزاد کشمیر میں یہاں کے تعلیمی اداروں کا معیار سب سے بلند ہے اور یہاں کے اداروں میں آزاد کشمیر کے دور دراز علاقوں سے لوگ اپنے بچوں کو تعلیم حاصل کرنے کے لیے بھیجتے ہیں جو کہ ہمارے لیے فخر کی بات ہے ہم ہر مشکل وقت میں آپ کے ساتھ ہیں اور ہماری تعاون جاری رہے گا سردارغلام صادق خان نے کہاکہ ایک پڑھا لکھا معاشرہ قوم کی بہترین نمائندگی کرسکتا ہے اور دنیا کے جملہ چیلنجز کا مقابلہ کرنے کے لیے اعلیٰ اور جدید تعلیم کا حصول انتہائی ضروری ہے انہوں نے مذید کہاکہ ہماری حکومت نے این ٹی ایس منظور کیا لیکن اس وقت وفاق میں میاں نواز شریف نے فنڈز نہیں دے این ٹی ایس ،ہائیڈروپاورپراجیکٹس، گریٹر واٹر سپلائیز،تعلیمی اداروں کی منظوری اور ایشن ترقیاتی بنک کے منصوبہ جات ہماری حکومت کے کارہائے نمایاں ہیں جنکا کریڈٹ کوئی اور نہیں لے سکتا ۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.