سعودی عرب میں ٹیکس متوقع ،غیرملکی تارکین پریشان

سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات نے 2018ء میں مصنوعات اور خدمات پر5 ؍فیصد ویلیو ایڈڈ ٹیکس کے نفاذ کی منصوبہ بندی کی ہے ۔

یہ فیصلہ گزشتہ3برسوں کے دوران تیل کی قیمتیں کم ہونے کی وجہ سے کیا گیا ہے۔

سعودی عرب جہاں تارکین ِوطن طویل عرصے سے ٹیکس فری زندگی گزار رہے تھے حکومت کا یہ اقدام ان افراد کے لئےمالی مشکلات پیدا کر سکتا ہے۔

خبر رساں ادارے کے مطابق ٹیکس مختلف اشیاء پر لاگو کیا جائے گا جن میں خوراک ، الیکٹرونک ،گیس اور کپڑوں کی مصنوعات کے ساتھ فون، پانی اور بجلی کے بلز، اور ہوٹلزکی بکنگ شامل ہیں ۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.