پاکستان چین اور افغانستان کاسہ فریقی مشاورتی اجلاس، امن اور دیگر مسائل پر گفتگو

بیجنگ:  میں پاکستان، چین اور افغانستان کاسہ فریقی مشاورتی اجلاس شروع ہوگیا، جس میں افغان امن عمل اورتینوں ملکوں کے تعلقات پربات چیت جاری ہے۔ مذاکرات کامقصداِن ممالک میں تعاون اور تعلقات کومضبوط بناناہے۔

مشاورتی اجلاس میں پاکستان،چین اورافغانستان کے وزرائے خارجہ شریک ہیں، وزیر خارجہ خواجہ آصف اجلاس میں پاکستان کی نمائندگی کررہے ہیں۔ چینی وزیرخارجہ وانگ ژی اورافغان وزیرخارجہ صلاح الدین ربانی بھی اجلاس میں شریک ہیں۔

مذاکرات کے دوران باہمی سیاسی اعتماد، مفاہمت، ترقیاتی تعاون، روابط، سلامتی تعاون اور دہشت گردی کی حوصلہ شکنی جیسے اہم موضوعات پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

مذکورہ مذاکرات کے ذریعے باہمی اعتماد کو فروغ ملے گا، افغانستان اور پاکستان کے تعلقات بہتر ہوں گے اور خطے میں امن، استحکام اور ترقی کے لئے تینوں فریق مشترکہ اقدامات کر سکیں گے۔

یہ پہلا موقع ہے کہ سہ ملکی وزرائے خارجہ کا اجلاس چین کی میزبانی میں ہورہا ہے۔ چینی وزیرخارجہ وانگ ژی کا کہنا ہے کہ ہم چاہیں گےکہ سہ فریقی مذکرات کااچھا نتیجہ نکلے۔

اس سے پہلے پاک چین اجلاس میں باہمی دلچسپی کے امور اور سی پیک منصوبے پرتبادلہ خیال کیا گیا۔ بیجنگ میں پاکستان اور چین کے وزرائے خارجہ کے درمیان باہمی دلچسپی کے امور اور سی پیک منصوبے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

بات چیت میں وزیر خارجہ خواجہ آصف نے مذاکرات میں پاکستان کی نمائندگی کی جبکہ مذاکرات میں سیکریٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ اور ڈی جی چین ڈیسک بھی شریک تھیں۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.