Daily Taqat

مقبوضہ کشمیر میں 13 سال بعد بلدیاتی انتخابات کا ڈرامہ

مقبوضہ کشمیر میں آج بھارتی حکومت کی جانب سے میونسپل اور پنچایت انتخابات کا ڈھونگ رچایا جارہا ہے ، اس موقع پر وادی میں حریت قیادت کی کال پر مکمل بائیکاٹ اور ہڑتال کا اعلان کیا گیا ہے۔مقبوضہ کشمیر میں 13 سال بعد بلدیاتی انتخابات کا ڈرامہ رچایا گیا ہے اور اس کے پہلے مرحلے میں ایک درجن سے زائد اضلاع کے 422 حلقوں میں پولنگ ہوگی۔قابض انتظامیہ کے مطابق 4 مرحلوں پر مشتمل بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے کیلئے ووٹنگ آج ہو رہی ہے، جبکہ چاروں مرحلوں میں ڈالے جانے والے ووٹوں کی گنتی 20 اکتوبر کو ہوگی۔کٹھ پتلی انتظامیہ کی جانب سے جنوبی کشمیر میں انٹرنیٹ کی خدمات معطل کر دی گئی ہیں، جبکہ یہاں سخت پابندیوں کے ساتھ ساتھ بھارتی فورسز کی اضافی نفری بھی تعینات کی گئی ہے۔واضح رہے کہ انتخابات کے موقع پر حریت رہنما میر واعظ عمر فاروق سمیت دیگر رہنماؤں کو گھروں میں نظربند اور گرفتار کیا گیا ہے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »