اہم خبرِیں

کرونا کے باعث عالمی غذائی بحران پیدا ہوسکتا ہے، اقوام متحدہ

اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گوٹیرس نے کہا ہے کہ دنیا میں اس وقت 82 کروڑ افراد بھوک کا شکار ہیں۔ کرونا وائرس کے باعث صورتحال مزید ابتر ہوسکتی ہے۔ عالمی براداری بحران سے بچنے کیلئے فوری اقدامات کرے۔

غذائی سلامتی پر کرونا وائرس کے اثرات پر بریفنگ دیتے ہوئے اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل نے نے کہا کہ پانچ برس سے کم کے تقریبا 14.4 کروڑ بچے غذائی قلت کے باعث کمزوری اور نشو نما کے رک جانے کا شکار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ دنیا کی آبادی کے 7.8 ارب افراد کے لیے وافر خوراک موجود ہے مگر ہمارے غذائی نظام ناکام ہیں جس کے باعث 82 کروڑ افراد کو بھوک کا سامنا ہے۔ غذا اور غذائیت سے متعلق خدمات کو بنیادی حیثیت حاصل ہونی چاہیے ورنہ موجودہ عالمی معاشی تنزل کے بعد تقریبا 4.9 کروڑ افراد شدید غربت کے گڑھے میں جا سکتے ہیں۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.