بھارت میں ایک ساتھ تین طلاقیں دینا جرم قرار

نئی دہلی:بھارتی پارلیمنٹ میں بیک وقت تین طلاقوں کو جرم قرار دینے کا بل منظور کرلیا گیا۔ نئے قانون کے نفاذ کے بعد مطلقہ خاتون اپنے سابق شوہر سے نان نفقے اور نابالغ بچوں کو اپنی تحویل میں لینے کی درخواست بھی دائر کرسکتی ہے۔بھارت میں طلاق بدعی جرم قراردی گئی۔ شوہرکی جانب سے ایک ساتھ بیوی کو تین طلاقین دینے کو جرم قرار دینے کا بل منظور کرلیا گیا۔لوک سبھا میں منظور کیے جانے والے ’’مسلم ویمن پروٹیکشن رائٹس آن میرج‘‘ بل کے تحت زبانی یا تحریری سمیتکسی بھی صورت میں بیک وقت تین طلاق دینا غیرقانونی ہوگا۔۔نئے قانون کے تحت تین طلاق لکھ کر ای میل، واٹس اپ یا پیغام کے ذریعے دینے پرتین سال قید اور جرمانہ بھی ادا کرنا ہوگا۔یہی نہیں مطلقہ خاتون سابق شوہر سے نان نفقے اور نابالغ بچوں کو تحویل میں لینے کی درخواست بھی کرسکتی ہے۔بل کے محرک وزیرقانون روی شنکر نے اس دن کو تاریخی قرار دیتے ہوئے کہا کہ مسلم ویمن پروٹیکشن رائٹس آن میرج ایکٹ کسی مذہب یا کمیونیٹی کے خلاف نہیں بلکہ انصاف اور خواتین کی عزت کے لیے ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.