اسرائیل بھارتی گٹھ جوڑ،پھر اسلام مخالف زہر اگلنے لگے

نئی دہلی : اسرائیلی وزیراعظم بھارت پہنچتے ہی بھارتی زبان بولنے لگے، دیرنیہ دوستوں نے ایک بار پھر مل کر پاکستان اور اسلام کے خلاف سازش کرتے ہوئے کہا ہے ہے کہ بھارت اور اسرائیل کو اسلامی انتہا پسندی کا سامنا ہے۔

جاری ہونے والی اطلاعات کے مطابق بھارت کے دورے پر نئی دہلی میں موجود اسرائیلی وزیراعظم نتن یاہو نے پھر اسلام دشمنی میں زہر اگلتے اور بھارت کو خوش کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت اور اسرائیل کو اسلامی انتہاپسندی کا سامنا ہےاور ان چیلنجز سے نمٹنے کے لیے دونوں ممالک کے درمیان تعاون بڑھانا ہوگا

نئی دہلی میں کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اسرائیلی وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ہمارے جدید نظام زندگی کو اسلامی انتہاپسندی سے چیلنج کیا جا رہا ہے اور انتہاپسند مختلف جگہوں سے ہمیں نشانہ بنا رہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ چیلنجز کا مقابلہ کرنے کے لیے دونوں عظیم جمہوریتوں کو ہر شعبے میں تعاون بڑھانا ہوگا، جب کہ موجودہ دورے میں بھارت کےساتھ سماجی اور سیکیورٹی تعاون بڑھانے پربات ہوئی ہے۔واضح رہے کہ اسرائیلی وزیراعظم چھ روزہ دورے پر بھارت میں موجود ہیں، وہ اپنے ہمراہ 130 افراد کے وفد کے ساتھ تین روز قبل بھارت پہنچے ہیں۔ پندرہ برس کے دوران یہ کسی بھی اسرائیلی وزیراعظم کا پہلا دورہ بھارت ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.