Daily Taqat

ایران کا شام پر حملہ

ایرانی پاسدارانِ انقلاب نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے مشرقی شام میں بیلسٹک میزائل سے حملہ کر کے ایران میں فوجی پریڈ پر حملے میں ملوث عسکریت پسندوں کے ہیڈ کوارٹر کو نشانہ بنایا ہے۔فرانسیسی ذرائع  کے مطابق ایرانی صدر نے 88-1980 کی ایران عراق جنگ کی یاد میں منعقدہ فوجی پریڈ پر حملے کی ذمہ داری داعش کی جانب سے قبول کیے جانے پر انہیں تباہ کرنے کے عزم کا اعلان کیا تھا۔ایران ذرائع  کا کہنا ہے کہ حملے سے شام میں موجود کئی عسکریت پسند ہلاک اور زخمی ہوئے۔ایرانی ذرائع کے مطابق پاسدارانِ انقلاب کی جانب سے متعدد درمیانے درجے تک مار کرنے والے ذوالفقار اور قائم نامی میزائل فائر کیے گئے جن کی حد 750 سے 8 سو کلومیٹر تھی۔ذرائع  کے مطابق میزائلوں نے شام کے سرحدی صحرائی علاقے میں دریائے فرات کے مغرب میں واقع البوکمال علاقے کو نشانہ بنایا۔دوسری جانب جنگ کی نگرانی کرنے والے برطانوی ادارے سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس کا کہنا تھا کہ البوکمال کے قریب داعش کے آخری زیر اثر علاقے میں علی الصبح بھاری بمباری ہوئی۔

 

خیال رہے کہ ایران کے جنوب مغربی علاقے اہواز میں 22 ستمبر کو فوجی پریڈ پر 5 مسلح افراد کے کیے جانے والے حملے میں24 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔جس کے بعد ایرانی حکام نے ابتدائی طور پر اس حملے کا ذمہ دار عرب علیحدگی پسنددوں کو ٹھہرایا تھا اور امریکا کی اتحادی خلیجی ریاستوں پر ان کی معاونت کا الزام عائد کیا تھا۔بعدازاں ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای نے حملہ آوروں کا تعلق شام اور عراق میں موجود عسکریت پسندوں سے ظاہر کیا تھا۔تاہم اگلے ہی روز ایران کی وزارت خفیہ اطلاعات کی جانب سے مبینہ ملزمان کی شائع کی جانے والی تصاویر میں ان کی نشاندہی بطور جہادی علیحدگی پسند ہوئی۔بعد ازاں شام میں موجود انتہا پسند تنظیم داعش نے حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے بتایا کہ پانچوں حملہ آوروں کا تعلق ایران سے تھا جب کہ ان میں 4 اھواز کے ہی رہائشی تھے، اس کے ساتھ انہوں نے ایران میں مزید حملے کرنے کی بھی دھمکی دی۔دوسری جانب سے شامی ذرائع ابلاغ نے فوری طورپر حملے سے آگاہ کرنے سے گریز کیا تاہم ٹی وی پر چلنے والی ایک فوٹیج میں دیکھا جاسکتا ہے کہ میزائل لانچ کرنے کے مقام ایک صحافی کھڑا ہے جبکہ علاقہ ایران کا مغربی صوبہ کرمانشاہ ہے۔واضح رہے کہ یہ ایران کی جانب سے ایک سال کے عرصے میں شام میں داعش کے خلاف کیا جانے والا دوسرا بڑا حملہ ہے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »