بھارت ابھی تک آلودگی پر قابو نہ پا سکا آلودگی ختم کرنے کیلئے بڑی بڑی توپوں کا استعمال

نئی دہلی :  دنیا بھر میں ریپ کیپٹل (جنسی زیادتیوں والا دارالحکومت ) کے نام سے جانا جانے والا بھارتی دارالحکومت نئی دہلی آلودگی میں بھی سب سے بڑھ کر ہے، گزشتہ کئی ماہ سے چھائی ہوئی شدید آلودگی کے خاتمے کیلئے حکومت نے وہاں فضا میں پانی پھینک کر آلودگی نیچے لانے والی توپوں کا تجربہ کیا ہے، اگر یہ تجربہ کامیاب ہوگیا تو دہلی کے مختلف علاقوں میں یہ توپیں نصب کردی جائیں گی۔
لاہور میں تو سموگ کا خاتمہ ہوگیا ہے لیکن بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں اب بھی شدید آلودگی نے عوام کا جینا محال کیا ہوا ہے۔ بدھ کی صبح دہلی کے علاقے آنند وہار میں اے کیو آئی انڈیکس پر آلودگی کی شرح 413 ریکارڈ کی گئی جبکہ صبح 8 بجے شہر بھر میں یہ انڈیکس 332 پر پہنچا ہوا تھا۔ خیال رہے اے کیو آئی انڈیکس 0 سے 500 سکیل تک ہوتا ہے، اگر اس کا سکیل 301 سے زیادہ ہو تو اس کو آلودگی کی انتہائی حساس شرح قرار دیا جاتا ہے۔نئی دہلی کی ریاستی اور بھارت کی وفاقی حکومت کودارالحکومت سے آلودگی ختم کرنے کا کوئی ذریعہ نظرنہیں آرہا جس کے باعث فضا میں پانی پھینکنے والی بڑی توپوں کا تجربہ کیا گیا۔ ان توپوں کے ذریعے تیز پریشر کے ساتھ فضا میں پانی پھینکا جاتا ہے ، یہ پانی آلودگی کو زمین پر نیچے لے آتا ہے جس سے آلودگی کا خاتمہ کیا جاسکتا ہے۔ دہلی کے علاقے آنند وہار میں ان توپوں کا تجربہ کیا گیا ہے تاہم ابھی تک ان کے نتائج سے آگاہ نہیں کیا گیا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.