اگر کلبھوشن یادیوکو نہ چھوڑا، تومٹ جاو گے ،بھارتی تجزیہ کارکی دھمکی

نئی دہلی :  پاکستان نے انسانی ہمدردی کی بنیاد پر بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کی والدہ اور اہلیہ سے ملاقات کیا کروائی، بھارت نے اس پر بھی سازش شروع کر دی اور گزشتہ روز سے اب تک زہر اگلنے کا سلسلہ جاری ہے جو تھمنے کا نام نہیں لے رہا۔

اسی موضوع پر بھارت کے براہ راست ٹی وی پروگرام میں کچھ بھارتی تجزیہ کاروں کیساتھ پاکستانی سیاسی تجزیہ کار طارق پیرزادہ کو بھی شرکت کی دعوت دی گئی۔ وہ پروگرام میں شریک ہوئے تو بھارتیوں نے اپنی تمام ’حدیں‘ ہی پار کر دیں اور پاکستان کو مٹا دینے تک کی دھمکی دیدی، جس پر طارق پیرزادہ نے انہیں لاجواب کر دیا۔
ایک بھارتی تجزیہ کار نے کہا کہ ”آج میں ایک نصیحت اور پیغام دے رہا ہوں آپ کو، اپنے آپ کو سدھار لو، کلبھوشن کو چھوڑ دو، بھارت سے اچھے تعلقات بنانا شروع کر دو، ورنہ وہ دن دور نہیں جب مٹ جاﺅ گے، مٹنا قریب آ گیا ہے، اگر آپ نہیں سدھرو گے تو اسی طرح کٹورا لے کر دنیا سے بھیک لے کر اپنا گزارا کرو گے، اور دہشت گردی میں تباہ ہو جاﺅ گے۔
نیک نیتی سے چلو، سرحدوں پر آرام سے رہو، ایل او سی پر بھی آرام سے رہو، بھارت آپ کیساتھ اچھے تعلقات چاہتا ہے، آپ ہمارا امتحان لینا بند کر دیں ورنہ میں بتا رہا ہوں کہ آپ کے بہت برے دن آنے والے ہیں۔ “
طارق پیرزادہ بھارتی تجزیہ کار کی باتوں کا جواب بھی ساتھ ساتھ ہی دیتے گئے اور جب اس نے کلبھوشن کو چھوڑنے کی بات کی تو طارق پیرزادہ نے کہا کہ ”آپ کشمیر چھوڑ دو تو تعلقات ٹھیک ہو جائیں گے، میں بھی ایک مشورہ دے رہا ہوں، کشمیر کو پاکستان کے پاس آنے دو،ہمارے تعلقات آپ کیساتھ ٹھیک ہو جائیں گے۔“

اسی طرح جب بھارتی تجزیہ کار نے کٹورا لے کر دنیا سے بھیک مانگنے کی بات کی تو طارق پیرزادہ نے ترکی بہ ترکی جواب دیتے ہوئے کہا کہ ” آپ کے پاس کیسی دنیا ہے، چین ہمارا دوست ہے، ترکی ہمارا دوست ہے، روس سے بھی ہمارے تعلقات ٹھیک ہو رہے ہیں، آپ کا تو ایک ہی ہے جس کا نام امریکہ ہے اور اب اسے کوئی بھی عزت دینے کو تیار نہیں ہے۔ دنیا میں اب بھارت کی عزت کرنے والا کوئی نہیں رہا، اس وقت آپ دہشت گردی کے برآمد کنندہ ملک ہیں۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.