’’ اگر بھارت نے سبق نہ سیکھا تو۔ ‘‘ پاکستان کے بعد چینی جنرل بھی میدان میں آگیا، واضح اعلان کردیا

چینی اکیڈمی آف ملٹری سائنسز کے میجرجنرل پینگ گوانگ کیان نے کہاہے کہ بھارت نے اگر سبق نہ سیکھا تو اس کے اقدامات سے با لآخر چین بھارت تعلقات کو نقصان پہنچے گا ،بھارت کا شکریہ کہ اس نے حالیہ ڈوکلام تنازعہ کے بعد مغربی حصے میں چین کو اپنی حکمت عملی بہتر بنانے پر مجبور کر دیا ہے ، چین کے مغربی بارڈر پر کئی کمزوریاں تھیں لیکن ڈوکلام تنازعے کے بعد چین نے ان پر قابو پالیا ہے کیونکہ ڈوکلام تنازعہ کی اصل وجہ بھارتی اقدامات ہیں ۔وہ سالانہ گلوبل ٹائمز فورم میں اظہار خیال کررہے تھے ۔انہوں نے کہا کہ ہمیں اس کیلئے بھارت کا شکرگزار ہونا چاہئے۔پیپلز لبریشن آرمی کی اکیڈمی آف ملٹری سائنسز کے ریسرچ فیلو زائو زیائو زو کا کہنا ہے کہ بھارت تبت کو چین کے بفرزون کے طورپر لیتا ہے، یہی وجہ ہے کہ انڈیا نے اس وقت زبردست رد عمل کا اظہار کیا جب چین نے تبت میں ریلوے اور ہائی ویز کی تعمیر کا آغاز کیا ۔انہوں نے کہا کہ بھارت کبھی بھی سڑکوں کی تعمیر کو ایک اچھے موقع کے طورپر نہیں لیتا اور وہ رابطوں کے بارے میں کچھ بھی نہیں جانتا ، بھارت صرف اپنے مفادات کے بارے میں سوچتا ہے لیکن اگر بھارت نے حالات سے سبق نہ سیکھا تو اس کے یہ اقدامات آخر کار دونوں ملکوں کے تعلقات کو نقصان پہنچائیں گے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.