افغانستان، فوجی بیس پر خود کش حملہ، 31 کمانڈوز ہلاک

غزنی: افغانستان میں فوجی کمانڈو بیس اور صوبائی کونسل کے سربراہ کے قافلے پر ہونے ہونیوالے 2 الگ الگ خود کش حملوں میں مجموعی طور پر 34 افراد ہلاک اور 36 زخمی ہوگئے ہیں۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق افغانستان کے شہر غزنی کے فوجی اڈے میں بارود سے بھری ملٹری گاڑی داخل ہوئی اور رہائشی کمروں کے قریب زوردار دھماکے سے پھٹ گئی جس کے نتیجے میں 31 فوجی ہلاک اور 24 زخمی ہوگئے۔ افغان میڈیا کا کہنا ہے کہ خود کش حملے میں آرمی کی گاڑی نہیں بلکہ ایک کار استعمال ہوئی تاہم ایک افسر نے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر رائٹرز کو بتایا کہ دھماکے کے لیے ملٹری گاڑی استعمال کی گئی۔

دوسری جانب صوبے زابل کے کونسل سربراہ کے قافلے پر بھی خود کش حملہ کیا گیا جس کے نتیجے میں صوبائی کونسل چیف کے 3 محافظ ہلاک ہوگئے اور 12 افراد زخمی ہیں۔ حملے میں زابل کے کونسل سربراہ محفوظ رہے۔ دونوں خود کش حملوں کی ذمہ داری تاحال کسی شدت پسند گروپ نے قبول نہیں کی ہے، طلبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے عالمی خبر رساں ادارے رائٹرز کی جانب سے رابطہ کرنے پر حملے میں ملوث ہونے کی تردید یا تصدیق نہیں کی۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.