Daily Taqat

چین: چاقو بردار خاتون کا کنڈر گارڈن میں موجود بچوں پر حملہ، 14 بچے زخمی

چین کے کنڈر گارڈن میں موجود کم سن بچوں پر حکومتی پالیسیوں پر نالاں خاتون نے چاقو سے حملہ کردیا، چاقو زنی کی واردات میں 14 بچے زخمی ہوگئے۔ تفصیلات کے مطابق چین کے جنوب مغربی شہر چونگ قنگ میں واقع کنڈر گارڈن میں 39 سالہ خاتون باورچی خانے میں استعمال ہونے والا چاقو لیے داخل ہوئی اور کھیل کے میدان میں موجود بچوں پر حملہ کر دیا۔

چینی پولیس کا کہنا ہے کہ افسوس ناک واقعہ جمعے کی صبح ضلع بنان میں واقع کنڈر گارڈن میں پیش آیا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ خاتون کے حملے کی وجوہات تاحال واضح نہیں ہیں، لیکن سماجی رابطوں کی رپورٹس کے مطابق خاتون کی حکومت سے کچھ شکایات تھیں۔ غیر ملکی ذرائع کا کہنا ہے کہ خاتون کی شناخت لیو کے نام سے ہوئی ہے، جسے پولیس نے جائے وقوعہ سے گرفتار کرکے پولیس اسٹیشن منتقل کردیا تھا۔

کنڈر گارڈن میں زخمی ہونے والے بچوں کو طبی امداد کیلئے اسپتال منتقل کر دیا گیا، زخمی ہونے والے زیادہ تر بچوں کے چہروں پر زخم آئے ہیں۔ پولیس نے میڈیا چینلز پر حادثے میں دو بچوں کی ہلاکت سے متعلق گردش کرنے والی خبروں کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ لوگ سوشل میڈیا پر افواہیں پھیلانیں سے گریز کریں۔

غیر ملکی ذرائع کے مطابق چین میں پُر تشدد واقعات نا ہونے کے برابر ہیں، لیکن کچھ برسوں سے اسکولوں اور کنڈر گارڈنز میں چاقو زنی کی وارداتوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

یاد رہے کہ رواں برس اپریل میں 28 سالہ شخص چین کے صوبے میزہی کے میڈل اسکول میں چاقو سے طالب علموں پر حملہ کر دیا تھا، جس کے نتیجے میں 9 بچے ہلاک جبکہ 10 سے زائد طالب علم زخمی ہوئے تھے، پولیس نے حملہ آور کو گرفتار کرلیا۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »