Daily Taqat

بنگلہ دیش کے سابق چیف جسٹس کو کرپشن پر 11 سال قید

ڈھاکا: بنگلہ دیش کی عدالت نے سابق چیف جسٹس سریندا کمار سنہا کو کرپشن کے جرم میں 11 سال قید کی سزا سنادی۔

جسٹس سریندا کمار سنہا بنگلہ دیش کے پہلے ہندو چیف جسٹس تھے۔ ڈھاکا کی خصوصی عدالت کے جج شیخ نظم العالم نے جسٹس سریندا کمار سنہا کے خلاف منی لانڈرنگ اور کرپشن کے مقدمے کی سماعت کی۔

جسٹس سریندا کمار سنہا عدالت میں پیش نہیں ہوئے۔ خصوصی عدالت نے جرم ثابت ہونے پر سریندا کمار سنہا کی غیر موجودگی میں انہیں منی لانڈرنگ کے جرم میں 7سال اور اعتماد مجروح کرنے کے جرم میں 4 سال یعنی مجموعی طور پر 11 سال قید کی سزا سنا دی۔

70 سالہ سابق چیف جسٹس اس وقت امریکا میں مقیم ہیں اور ان پر 4 کروڑ ٹکا کی منی لانڈرنگ کا کیس تھا، جو کسان بینک سے قرض لیا گیا تھا۔ جسٹس سنہا دو سال ملک کے چیف جسٹس رہے اور 2017 میں بیرون ملک منتقل ہوگئے۔

ان کے دور میں سپریم کورٹ نے ایک فیصلے میں ارکان پارلیمنٹ سے ملک کے اعلیٰ ترین ججز کو برطرف کرنے کا اختیار چھین لیا تھا۔ سنہا نے الزام لگایا ہے کہ ان سے جبری استعفیٰ لیا گیا تھا کیونکہ انہوں نے ملک کی موجودہ غیر جمہوری اور آمرانہ حکومت کی مخالفت کی تھی۔ اور ان کے خلاف کرپشن کا مقدمہ بھی محض انتقامی کارروائی ہے۔

واضح رہے کہ سابق چیف جسٹس سریندا کمار سنہا بنگلہ دیش کی تاریخ کے پہلے چیف جسٹس ہیں جنہیں کرپشن پر سزا سنائی گئی۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »