اسرائیلی شاعر کا بہادر فلسطینی لڑکی عہد تمیمی کو منظوم خراج تحسین

مقبوضہ بیت المقدس : اسرائیل کے ممتاز شاعر، ادیب اور دانشور نے عہد تمیمی کو فلسطینیوں کی ہیرو اور جدوجہد آزادی کی علامت قرار دے دیا، گیدعون لیوی نے صہیونی فوجی کو تھپڑ رسید کرنے کی پاداش میں پابند سلاسل نڈر فلسطینی عہد تمیمی کو منظوم خراج تحسین بھی پیش کیا ہے۔

اسرائیلی شاعر اور تجزیہ نگار گیدعون لیوی نے ’انسٹا گرام‘ پر اپنی ایک پوسٹ میں لکھا ہے کہ اگر عہد تمیمی بھی اسرائیلی ضمیر سے کوئی ہمدردی حاصل نہیں کر سکتی تو سمجھ لیں کہ فلسطینیوں کیلئے اسرائیلی ضمیر کبھی حرکت نہیں کرے گا

اسرائیلی شاعر نے مزید لکھا کہ 17 سالہ خوبصورت فلسطینی بچی نے اپنے گھر پر دھاوا بولنے والے اسرائیلی فوجی کو تھپڑ مار کر خوفناک حرکت کی، عہد تمیمی نے ایک طمانچہ مارا اور اسرائیلی فوج فلسطینیوں کو 50 سال سے طمانچے رسید کرتی چلی آ رہی ہے، سرخ بالوں والی عہد تمیمی تم دیکھو گی کہ تم ایک روز جان ڈارک، ہانا سینچ اور انا فرانک کے ساتھ ہوگی۔

اسرائیلی شاعر کی عبرانی میں شائع ہونیوالی نظم فلسطینی لڑکی عہد تمیمی کو شاندار خراج تحسین ہے، جس پر صہیونی وزیر دفاع آوی گیڈور لائبرمین شدید ناراضی کا اظہار کرتے ہوئے گیدعون کی تمام نظمیں شائع کرنے پر پابندی عائد کردی۔

جواں سال فلسطینی لڑکی عہد تمینی کو آئندہ ماہ کے آخر میں دوبارہ عدالت میں پیش کیا جائے گا، اس وقت تک وہ بغیر کسی فرد جرم عائد کئے پابند سلاسل رہنے کے 3 ماہ مکمل کرلے گی۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.