اہم خبرِیں
پولیس، پٹوار کلچر میں کرپشن ہورہی ہے، عمران خان پنجاب حکومت 50 کروڑ ڈالرقرض لے گی پارک لین ریفرنس، آصف زرداری کی درخواست مسترد لڑکی کی لڑکی سے شادی کیس، دلہا کا نام ای سی ایل میں شامل بھارت میں سیکڑوں مساجد مندروں میں تبدیل نوازشریف کو سزا دینے والے جج برطرف ایم ایل ون منصوبہ میری زندگی کا مشن تھا، شیخ رشید پاکستان کا نیا نقشہ گوگل سمیت تمام سرچ انجنز کو بھجوانے کا فیص... حکومت کا ہوٹل، پارکس، سیاحتی مقامات کھولنے کا اعلان ملک میں کوروناکیسزمیں کمی، 21 اموات رپورٹ آبی ذخائر میں پانی کی آمد و اخراج کی صورتحال کلبھوشن یادیو کے معاملے پر پاکستان کا بھارت سے پھررابطہ احساس پروگرام کے تحت 169 ارب روپے تقسیم پاکستان نے سعوی عرب کا قرضہ واپس کر دیا پاکستان کو 40 کروڑ ڈالر قرضوں کی منظوری برطانوی خلائی کمپنی "سپر سانک" کمرشل طیارہ بھی بنائے گی اولڈٹریفورڈ ٹیسٹ، پاکستان 139 رنز سے اننگز آگے بڑھائے گا بیروت دھماکے، ہنگامی حالت کا نفاذ شہباز شریف اور حمزہ شہباز پر فرد جرم عائد پاکستان کی درخواست پرسلامتی کونسل کا ایمرجنسی اجلاس

آئندہ پانچ سال حالیہ تاریخ کے گرم ترین سال ثابت ہوں گے، عالمی ادارہ برائے موسمیات

امریکہ: اقوامِ متحدہ کے عالمی ادارہ برائے موسمیات نے امکان ظاہر کیا ہے کہ آئندہ 5 سال حالیہ تاریخ کے گرم ترین سال ثابت ہوں گے اور اس دوران عالمی درجۂ حرارت پری انڈسٹریل دور کے مقابلے میں ہر سال کم از کم 1 ڈگری سینٹی گریڈ زیادہ ہوگا۔

عالمی ادارے کے مطابق اگلے 5 برسوں کے دوران مغربی یورپ میں مزید طوفان آئیں گے، جب کہ سال 2020 میں جنوبی امریکا، جنوبی افریقہ اور آسٹریلیا کے متعدد حصے زیادہ تر خشک موسم کی لپیٹ میں رہیں گے۔

عالمی ادارے کے مطابق گزشتہ 5 برسوں کے دوران درجہ حرارت میں واضح اضافہ ہوا ہے اور ریکارڈ کے اعتبار سے گزشتہ 5 برس دنیا کے گرم ترین سال تھے۔ لیکن ادارے کے بقول 2020 سے 2024 تک کی 5 سالہ مدت کے دوران درجہ حرارت نئی بلندیوں تک جائے گا۔

تنظیم کے سیکریٹری جنرل کا کہنا ہے کہ چوں کہ کاربن ڈائی آکسائیڈ فضا میں دیر تک موجود رہتی ہے، اس لیے رواں سال کرونا وائرس کے سبب معاشی اور صنعتی سرگرمیاں بند ہونے کے باوجود عالمی درجہ حرارت پر اس کے مثبت اثرات پڑنے کے امکانات نہیں ہیں۔

واضح رہے کہ پری انڈسٹریل دور 1850 سے 1900 کے درمیانی عرصے کو کہا جاتا ہے جب دنیا میں صنعتی سرگرمیاں کا صحیح معنوں میں آغاز بھی نہیں ہوا تھا اور ان کے موسم اور درجہ حرارت پر اثرات نہ ہونے کے برابر تھے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.