Daily Taqat

عراق اور شام میں جنگ خاتمے کے بعد امریکا کی پوری توجہ افغانستان پر مرکوز

عراق اور شام میں جنگ خاتمے کے بعد امریکانے پوری توجہ افغانستان پر مرکوز کرلی اور مزید فضائی جنگی ساز و سامان سمیت جاسوسی کے لئے مزید ڈرونز اور لڑاکا طیارے افغانستان پہنچا دئیے ہیں۔

بین الاقوامی ذرائع کے مطابق اتحادی فضائیہ کے میجر جنرل جیمز ہیکر نےکابل سے ویڈیو ٹیلی کانفرنس کے دوران کہا کہ عراق اور شام میں کامیابی کے بعد سینٹ کام نے باضابطہ طور پر افغانستان کو اپنی کوششوں کا مرکز قرار دے دیا ہے اور فضائی جنگی اثاثے وہاں منتقل کرنا شروع کر دیئے ہیں۔

جنرل ہیکر نے بتایا کہ اب اتحادی فوج کے پاس گزشتہ سال کے مقابلے میں جاسوسی کے لئے ایم کیو نائن ڈرونز کی تعداد 50 فیصد زیادہ ہوچکی ہے، جبکہ اے ٹن اور دیگر لڑاکا طیاروں کی تعداد بھی بڑھ گئی ہے جس سے فوج کی طالبان کے ٹھکانوں کی نگرانی اور ان پر حملوں کی صلاحیت میں اضافہ ہوا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ حملوں کے ذریعے طالبان پر دباؤ بڑھایا جائے گا تاکہ انہیں مذاکرات کی میز پر لایا جاسکے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »