انڈیا میں ایک باپ نے اپنی بیٹی کو حوس کا نشانہ بنا ڈالا

نئی دہلی :  بھارت میں حیوانیت اس حدتک بڑھ گئی ہے کہ سگے باپ نے ہی اپنی بیٹی کو جنسی درندگی کا نشانہ بنا ڈالا جس سے لڑکی حاملہ ہوگئی جبکہ ملزم کو عدالت نے تین دفعہ عمر قید کی سزا سناتے ہوئے جیل بھجوادیا۔
تفصیلات کے مطابق بھارتی ریاست تامل ناڈو کی خواتین سے متعلق عدالت نے 48سالہ ملزم کو اپنی 14سالہ بیٹی سے بدفعلی کا ذمہ دارٹھہرایا اور اراسان کدی کے رہائشی ملزم کماراج کو 2013ءسے گرفتاری تک کئی مرتبہ اپنی بیٹی سے بدفعلی اور بیوی کو دھمکیاں دینے پر 43سال قید کی سزا سنائی ۔  ملزم کے جبروتشدد سے دلبرداشتہ ہوکر بالآخر لڑکی کی والدہ نے دسمبر2014ءمیں شکایت درج کرائی تھی جبکہ باپ کی بدفعلی کا نشانہ بننے والی لڑکی کے ہاں مارچ2015ءمیں بچہ پیداہواتھا جو بعدازاں جون میں انتقال کرگیا۔رپورٹ کے مطابق خاتون کی شکایت پر پراسیکیوشن نے مقدمہ درج کرلیاتھا اور ملزم کو قید کیساتھ ساتھ مجموعی طورپر 1500روپے جرمانہ بھی کیاگیا۔عدالت نے اپنے ریمارکس میں کہاکہ جرم کو عدالت نے سنجیدگی سے لیا اور زیادہ سے زیادہ سزا سنائی ۔ پراسیکیوٹر نے بتایاکہ اس تشدد کی وجہ سے لڑکی نفسیاتی طورپر مریض بن چکی ہے ، جولائی 2013ءمیں شروع ہونیوالی بدفعلی سے لڑکی کے حاملہ ہونے کے انکشاف پر اس کی والدہ نے شکایت درج کرانے کی کوشش کی تو ملزم نے اسے دھمکیاں دیں اور بالآخر خاتون اس وقت دسمبر2014ءمیں اپنی شکایت درج کرانے میں کامیاب ہوگئی جب لڑکی 7ماہ کی حاملہ تھی


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.