جنوبی سوڈان میں قبائل کے درمیان تصادم،170سے زائد ہلاک ، 200 زخمی

جنوبی سوڈان میں گزشتہ ایک ہفتے کے دوران دوگروپوں کے درمیان ہونے والے خونی فسادات میں کم از کم 170 افراد ہلاک اور200سے زائد زخمی ہوگئے ہیں، قبائل کے درمیان تصادم 6دسمبر کو شروع ہوا تھا جس دوران342گھروں کو جلا دیا گیا جبکہ18سو سے زائد افراد بے گھر ہوگئے ہیں، حکومت نے علاقے میں ایمرجنسی نافذ کرتے ہوئے فورسز کی مدد طلب کرلی ہے۔ جنوبی سوڈان کے ویسٹرن لیکس ایریا سے رکن پارلیمنٹ دہاروائی مبور ٹینی کے مطابق ڈنکا قبائل کے درمیان شروع ہونی والی معمولی تلخ کلامی ایک بہت بڑی جنگ میں بدل گئی۔متحارب گروپوں کی جانب سے ایک دوسرے پر گرنیڈ پھینکے جا رہے ہیں اور راکٹ سے حملے کیے جا رہے ہیں۔ فسادات کے دوران ایک دوسرے کے گھر بھی نذر آتش کیے جا رہے ہیں جس کی وجہ سے لوگ اپنے گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہیں۔نسلی فسادات کی وجہ سے شہری محصور ہو کر رہ گئے ہیں جب کہ ایمرجنسی کا مقصد فسادات کا خاتمہ ہے۔صدراتی ترجمان کے بعد علاقے میں فوری طور پر ایمرجنسی نافذ کرتے ہوئے فوج کی بھاری نفری طلب کر لی گئی ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.