اہم خبرِیں
مریخ پر پانی سے بھرے سمندرکبھی نہیں تھے، سائنسدان گلوکار بلال سعید نے مسجد میں گانے کی ریکارڈنگ پر معافی مانگ لی ایران پر اسلحے کی پابندی میں توسیع کی جائے، عرب ممالک بل گیٹس نے پاکستان کی کورونا کے خلاف کامیابی کو تسلیم کر لیا کورونا سے نمٹنے میں پاکستان دنیا کے لیے مثال ہے، اقوام متحدہ مسجد وزیرخان میں گانے کی عکس بندی، منیجر اوقاف معطل چمن، بم دھماکہ 5 افراد جاں بحق، متعدد زخمی حب ڈیم، پانی کی سطح میں ریکارڈ اضافہ لاک ڈاؤن کے بعد کراچی میں تفریحی مقامات کھل گئے سپریم کورٹ کا کراچی سے تمام بل بورڈز فوری ہٹانے کا حکم پاکستان کو اٹھارویں ترمیم دی اس لیے مقدمات بن رہے ہیں، ، زردار... وفاق کے اوپر کوئی وزارت نہیں بن سکتی، اسلام آباد ہائی کورٹ پاکستان پوسٹ آن لائن سسٹم سے منسلک اختیارات کا ناجائز استعمال، چیئرمین لاہور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی ر... موسمیاتی تبدیلیوں کی وجہ سے گندم کی پیداوارکم ہوئی، وزیراعظم اسٹاک مارکیٹ، کاروباری حجم 4 سال کی بلندترین پرپہنچ گیا سائنسی انقلاب، مرے ہوئے شخص سے "حقیقی ملاقات" ممکن آمنہ شیخ نے دوسری شادی کرلی؟ آئی سی سی کی نئی ٹیسٹ رینکنگ جاری افغانستان لویہ جرگہ، 400 طالبان کی رہائی کی منظوری

نیپال نے بھارت کا جنگی طیارہ تباہ کردیا ؟

کھٹمنڈو: شوشل میڈیا پریہ خبر زیر گردش تھی کہ نیپال نے سرحدی حدود کی خلاف ورزی پر بھارتی فضائیہ کے طیارے کو مار گرایا جس کے نتیجے میں دو پائلٹ ہلاک ہوگئے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ارمک اڈویا نامی صارف نے فضا میں نشانہ بنائے گئے جنگی طیارے اور زمین پر گرے ملبے کی تصاویر شیئر کی۔ انہوں نے لکھا کہ آج بھارتی فضائیہ نے ایئراسٹرائیک کرنے کے لیے نیپال کی سرحدی حدود میں داخل ہونے کی کوشش کی۔ بھارت کوٹ کھرک سنگھ پیرناوان کے مقام پر حملہ کرنا چاہتا تھا۔ ارمک اوڈیا نے لکھا کہ یہ مقام بھارت اور نیپال کی سرحد کے درمیان میں ہے۔

ارمک کے مطابق نیپال کی فوج نے سرحدی حدود کی خلاف ورزی کرنے والے طیارے کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں وہ تباہ ہوگیا اور اُس میں سوار دو پائلٹ ہلاک ہوگئے۔ ارمک کی اس پوسٹ کے مطابق صارفین نے مذکورہ تصاویر سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر شیئر کیں۔ یاد رہے کہ انٹرنیٹ پر غیر مصدقہ خبریں شیئر کرنے کا سلسلہ کوئی نیا نہیں ہے، اسی وجہ سے سوشل میڈیا کمپنیز نے مختلف پالیسیاں متعارف کرائی ہیں۔

انٹرنیٹ پر شیئر ہونے والی تصاویر دراصل لیبیا میں تباہ ہونے والے جنگی طیارے میریگ 2000 کی ہے جو ایک برس قبل بنگلور میں ہال ایئرپورٹ کے قریب گر کر تباہ ہوا تھا۔ علاوہ ازیں بھارتی حکومت نے بھی وضاحت کی ہے کہ نیپال کے ساتھ کوئی اس طرح کی جھڑپ ہوئی اور نہ ہی کسی طیارے کو نشانہ بنایا گیا۔

واضح رہے کہ ان دنوں نیپال اور بھارت کے درمیان شدید کشیدگی پائی جاتی ہے، کھٹمنڈو حکومت نے بھارت کی جانب سے پیش کیے گئے نقشے کے بعد مختلف اقدامات کیے اور بھارتی چینلز کی نشریات اپنے ملک میں بند کردی ہیں۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.