Latest news

امریکا طالبان مذاکرات فیصلہ کن ثابت ہونے کا امکان

دوحہ: قطر میں دوبارہ شروع ہونے والے امریکا طالبان امن مذاکرات کے فیصلہ کن ہونے کا امکان ہے، ذرایع کا کہنا ہے کہ مذاکرات آج ہی شروع ہو سکتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق امریکا اور طالبان کے درمیان مذاکرات آج سے شروع ہونے کا امکان ہے،مذاکرات کے لیے امریکا کے نمایندہ خصوصی زلمے خلیل زاد دوحہ میں موجود ہیں، وہ آج ہی کابل سے قطر پہنچے تھے۔

طالبان ذرایع کا کہنا ہے کہ گزشتہ شب خلیل زاد اور طالبان میں رابطے ہوئے ہیں، فریقین نے جمعے کو ملاقات اور مذاکرات کے ایجنڈے پر بات چیت کی، امریکا آج سے مذاکرات شروع کرنے کے لیے تیار ہے، مذاکرات کا یہ مرحلہ فیصلہ کن ثابت ہو سکتا ہے، امریکا اور طالبان میں معاہدے پر پہلے سے اتفاق ہو چکا ہے۔

دھر امریکی حکام نے افغان میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ طالبان سے بات چیت کا آغاز آج دوحہ میں ہوگا، افغانستان میں تشدد میں کمی، انٹرا افغان مذاکرات اور سیز فائر پر بات ہوگی۔

یاد رہے کہ افغان امن مذاکرات کی منسوخی پر طالبان ترجمان ذبیح اللہ نے کہا تھا کہ امن مذاکرات کی منسوخی کا سب سے زیادہ نقصان امریکا ہی کو پہنچے گا۔ قبل ازیں، 8 ستمبر کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے طالبان کی جانب سے کابل حملے کی ذمہ داری قبول کرنے کے بعد امن مذاکرات منسوخ کر دیے تھے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.