اہم خبرِیں
مریخ پر پانی سے بھرے سمندرکبھی نہیں تھے، سائنسدان گلوکار بلال سعید نے مسجد میں گانے کی ریکارڈنگ پر معافی مانگ لی ایران پر اسلحے کی پابندی میں توسیع کی جائے، عرب ممالک بل گیٹس نے پاکستان کی کورونا کے خلاف کامیابی کو تسلیم کر لیا کورونا سے نمٹنے میں پاکستان دنیا کے لیے مثال ہے، اقوام متحدہ مسجد وزیرخان میں گانے کی عکس بندی، منیجر اوقاف معطل چمن، بم دھماکہ 5 افراد جاں بحق، متعدد زخمی حب ڈیم، پانی کی سطح میں ریکارڈ اضافہ لاک ڈاؤن کے بعد کراچی میں تفریحی مقامات کھل گئے سپریم کورٹ کا کراچی سے تمام بل بورڈز فوری ہٹانے کا حکم پاکستان کو اٹھارویں ترمیم دی اس لیے مقدمات بن رہے ہیں، ، زردار... وفاق کے اوپر کوئی وزارت نہیں بن سکتی، اسلام آباد ہائی کورٹ پاکستان پوسٹ آن لائن سسٹم سے منسلک اختیارات کا ناجائز استعمال، چیئرمین لاہور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی ر... موسمیاتی تبدیلیوں کی وجہ سے گندم کی پیداوارکم ہوئی، وزیراعظم اسٹاک مارکیٹ، کاروباری حجم 4 سال کی بلندترین پرپہنچ گیا سائنسی انقلاب، مرے ہوئے شخص سے "حقیقی ملاقات" ممکن آمنہ شیخ نے دوسری شادی کرلی؟ آئی سی سی کی نئی ٹیسٹ رینکنگ جاری افغانستان لویہ جرگہ، 400 طالبان کی رہائی کی منظوری

افغان حکومت عید الاضحیٰ پر جنگ بندی کے لیے تیار

کابل: افغانستان کی قومی مفاہمتی کونسل نے کہا ہے کہ افغان حکومت عید الاضحیٰ کے دوران جنگ بندی پر تیار ہے اور اس توقع کا اظہار کیا کہ طالبان بھی عید کے دنوں کے دوران لڑائی بند کرنے پر اتفاق کریں گے۔

کونسل کے ترجمان فریدون خازون نے اس امید کا بھی اظہار کیا کہ قیدیوں کی رہائی کے معاملے پر ڈیڈلاک سفیر زلمے خلیل زاد کے خطے میں موجودگی کے دوران حل کر لیا جائے گا۔ ادھر افغان وزارتِ داخلہ کے ترجمان طارق آرین کے مطابق حالیہ ہفتوں کے دوران طالبان نے افغانستان میں پُر تشدد کارروائیوں میں 34 فی صد اضافہ کیا ہے۔

افغان سیاسی تجزیہ کار خلیل صفی کہتے ہیں کہ قیدیوں کی رہائی کے معاملے پر طالبان کے مؤقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی اور گروپ اپنی فہرست میں شامل تمام 5000 قیدیوں کی رہائی پر اب تک بضد ہے۔ اگر خلیل زاد قیدیوں کے مسئلے کو حل کرا لیتے ہیں تو بین الافغان مکالمے کا پہلا اجلاس عیدالاضحیٰ کے فوری بعد منعقد ہو سکتا ہے۔

دوسری طرف حکومت افغانستان نے پیر کے روز کابل میں سینئر عہدے داروں کا چوتھا اجلاس منعقد کیا۔ افغان وزارت خزانہ نے بتایا ہے کہ صدر اشرف غنی آج منگل کے روز ابتدائی اجلاس سے خطاب کریں گے۔ وزارت کے ترجمان، سمروز خان مسجدی نے کہا ہے کہ آج کے اجلاس میں شرکا نے فریقین کو درپیش مسائل پر گفتگو کی۔

ترجمان نے اخباری نمائندوں کو بتایا کہ گروپ کے اجلاسوں میں آج سماجی اور معاشی نوعیت کے اثرات، افغانستان میں امن و امان اور ترقی سے متعلق معاملات پر گفتگو کی گئی۔

حکومت کی کارکردگی کے بارے میں، افغان حکومت دوسری رپورٹ پیش کرنے والی ہے، جس کا موضوع افغانستان کا قومی امن اور ترقیاتی لائحہ عمل ہوگا۔ اس دو روزہ اجلاس کا انعقاد اقوام متحدہ کے اعانتی ادارے کے توسط سے افغان وزارت خزانہ اور فن لینڈ کا سفارتخانہ کر رہا ہے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.