پنجاب فوڈ اتھارٹی کی پھلوں کو جلد پکانے کیلئےممنوع کیمیکلزکے استعمال پر وارننگ جاری

پھلوں کو جلد پکانے اور تادیر اسٹورکرنےکےلیےممنوع کیمیکلزکے استعمال پر پنجاب فوڈ اتھارٹی نے وارننگ جاری کر دی۔فوڈ اتھارٹی نے فروٹ منڈیوں، فروٹ فارمزاور کولڈ اسٹور مالکان کو موسم گرما کے لیے بھی وارننگ جاری کی گئی ہے۔ڈی جی فوڈ اتھارٹی نورالامین مینگل کا کہنا ہے کہ کیمیکل لگے پھل خاموش زہرہیں، ان کی فروخت کی کسی صورت اجازت نہیں دی جائے گی،فروٹ منڈیوں،فارمزاورکولڈ اسٹور کے مالکان صرف محفوظ فوڈ گریڈ کیمیکلز استعمال کریں۔انہوں نے انتباہ کیا کہ موسم گرما کے پھلوں کو کیلشیم کاربائڈ لگانے کی صورت میں تمام پھلوں کو موقع پر تلف کر دیا جائے گا۔انہوں نے مزید کہا کہ کیلشیم کاربائڈ لگے پھلوں کے استعمال سےکینسر، پیچیدہ دماغی امراض، حافظے کی کمزوری، نیند کی کمی اور انتڑیوں کی بیماریاں پیدا ہوتی ہیں۔ڈی جی فوڈ اتھارٹی نے کہا کہ کیلشیم کاربائڈ لگانے سے ایسیٹائلین گیس پیدا ہوتی ہے جو بیماریوں کا سبب بنتی ہے۔ محفوظ کیمیکلز کے حوالے سے صوبہ بھر کے کولڈ سٹور مالکان کو پنجاب فوڈ اتھارٹی عملہ تربیت دے چکا ہے۔انہوں نے کہا کہ جدید ممالک کی طرح پنجاب میں بھی پھلوں کو پکانے کے لیے ایتھالین گیس کا استعمال کیا جائے جو انسانی صحت کے لیے محفوظ ہے۔نورالامین مینگل کا کہنا تھا کہ موسم سرما میں بھی کیلشیم کاربائڈ اور دیگر کیمیکلز سے جلدی پھل پکانے والوں کے خلاف سخت کاروائی کی گئی تھی۔ عوام سے گزارش ہے کہ اشیاء خورونوش خریدتے ہوئے تمام حفاظتی ہدایات کو ملحوظ خاطر رکھیں۔پھل خریدنے کے فورا بعد مت کھائیں، ایک سے دو دن بعد استعمال کیے جائیں۔ پھل ہمیشہ ہلکے گرم پانی سے اچھی طرح دھونے کے بعد کھائے جائیں۔ڈی جی فوڈ اتھارٹی نے مزید کہا کہ بہت زیادہ پکے ہوئے پھلوں کو خریدنے سے اجتناب کریں، ایسے پھل زیادہ کیمیکلز والے ہو سکتے ہیں۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.