عمران خان مردان کی اسما کے گھر کیوں نہیں گئے :شہباز شریف

وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کہا ہے کہ مال روڈ پر احتجاج کرنے والوں نے زینب کے قتل پر آنسو بہائے اور قصور جا کر نماز جنازہ ادا کی ،مردان میں بھی زیادتی کے بعد قوم کی بیٹی کا قتل ہوا ،عمران خان مردان کی اسما کے گھر کیوں نہیں گئے ،زینب کے قتل پر اگر آنسو اصل ہیں تو یہ احتجا ج کرنے والے مردان کیوں نہیں گئے ۔ان کا کہنا تھا کہ زینب کے قاتل کو پکڑنے کے لیے آئی ایس آئی ،ایم آئی ،نادرا اور فرانزک اداروں سمیت دیگر ادارے مل کرسائنسی بنیادوں پر تحقیقات کر رہے ہیں اور اس دوران اہم پیشرفت ہوئی ہے جس کے مطابق زینب کو قتل کرنے والوں کے ساتھ اور بھی ملزمان شریک جرم ہیں ۔شہبازشریف نے کہا کہ زینب کے کیس پر پیشرفت کا جائزہ لینے آیا، تحیققات کے لیے تمام ادارے انتھک محنت کررہے ہیں، کیس میں عسکری ایجنسیز، نادرا اور فارنزک ڈیپارٹمنٹ کا بھی بے پناہ تعاون حاصل ہے۔انہوں نے کہا کہ ذاتی طور پر اس معاملے کی دن رات نگرانی کررہا ہے، اس بارے میں کوئی قیاس آرائی نہ کی جائے، تحقیقاتی ٹیم کی پوری مدد کی جائے۔وزیراعلیٰ پنجاب کا کہنا تھا کہ ملزمان کو پکڑنے کے لیے کوئی کسر نہیں چھوڑی جارہی، پر امید ہیں کہ ملزمان پکڑے جائیں گے لیکن کوئی وقت نہیں دوں گا، کوشش ہے جلد ملزمان کو قانون کے مطابق کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔شہبازشریف نے زینب کے اہل علاقہ سے اپیل کہ وہ تحقیقاتی ٹیم کا ساتھ دیں، ان کا نام صیغہ راز میں رکھا جائےگا، تحقیقاتی ٹیم کسی طرح بھی ساتھ دینے والوں کا نام سامنے نہیں لائے گی۔وزیراعلیٰ پنجاب نے مزید کہا کہ مجرموں کو پکڑنا سب سے اولین ذمہ داری ہے، ینب قتل کیس پر بہت پیشرفت ہوئی ہے جون انتہائی سائنٹفک طریقے سے جاری ہے، تمام افسران بہت تندہی سے کام کررہے ہیں اور اس حوالے سے جامع کوششیں جاری ہیں۔شہبازشریف کا کہنا تھا کہ سائنٹفک انویسٹی گیشن بتارہی ہے کہ اصل مجرم کے ساتھ اس کا کوئی ساتھی بھی ہوسکتا ہے۔مال روڈ پر دھرنے سے متعلق سوال پر وزیراعلیٰ پنجاب نے مردان میں زیادتی کا نشانہ بننے والی بچی عاصمہ کا ذکر کیا۔انہوں نے کہا کہ زینب کی طرح عاصمہ بھی قوم کی بیٹی ہے، دھرنا دینے والوں کی اگر مثبت سوچ ہے تو جو لوگ مال روڈ پر آئے ہیں کیا یہ لوگ اس طرح مردان جاکر عاصمہ کے لیے بھی آنسو بہائیں گے۔شہبازشریف کا کہنا تھا کہ ان معاملات پر سیاست نہ کریں، قوم کو جذبات کو نہ بھڑکایا جائے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.